جمعرات, جون 20, 2013

جھوٹ کا کرب

تاریخ پاکستان
لاہور کے شاہی قلعے کی صرف چند دیواروں اور دروازے تک کی تاریک تاریخ بتا کر شارٹ کٹ مارا جاتا ہے
کہ
بادشاہی مسجد کے ساتھ مفکر پاکستان کی قبر ہے اور یہاں سے لے کر مینار پاکستان تک کا سفر ہی تاریخ ہے۔
راجہ لو سے لے کر مغلوں تک کی ثقافت اور تاریخ تو غرق کی ہی ہے
بادشاہی مسجد سے مفکر پاکستان کے ساتھ راجے رنجیت سنگھ کی مڑی کا کیا کرنا ہے؟
اس مڑی سے جڑی تاریخ کا کیا ہوا ؟؟
ہاہاہاہا
بے چارے لوگ!!!۔
مغالطوں اور مبالغوں سے بھری جھوٹی تعلیم کو لے کر چلے ہیں قوموں کی برادری میں معتبر بننے!!!َ۔

ہاہاہاہا خاور وی پاغل ای اے
کہ خود بھی تو ان میں ہی سے ہے ناں جی ۔ جن کو یہ تعلیم دی جارہی ہے ۔
خاور بھی کیا کرے
کہ اس کوے کی طرح جس نے چونا لگا کر  ہنسوں میں شامل ہونا چاہا تھا
اس کی طرح منافقت نہیں کر سکتا
ہاں خاور ایک مجبور محض ہے کہ
اس کے سارے اپنے لوگ جھوٹ کے کرب میں مبتلا کر دیئے گئے ہیں ۔
لیکن خاور ان کے لئے کچھ بھی نہیں کر سکتا ۔ سوائے اپنا کرب لکھنے کے ۔
جھوٹ کا کرب ہر طرف ہے ہر چیز میں ہے
کہ اب تو لوگ جھوٹ بول کر شرمندہ بھی نہیں ہوتے

1 تبصرہ:

آوارہ فکر کہا...

بالکل درست فرمایا جناب۔ ہم تاریخ کا قتل کرنے میں اپنا ثانی نہیں رکھتے۔ یہی وجہ ہے کہ جب میں اور آپ اپنے بڑوں اور استادوں سے کوئی بھی سوال آؤٹ آف سلیبس پوچھتے ہیں تو اس کا جواب ہی نہیں مل پاتا۔
آج کل میں بھی اس موضوع پہ بلاگت ربود کر رہا ہوں۔ یعنی کہ بھری دنیا میں اک آپ ہی نہیں، دو چار دیوانے اور بھی ہیں۔
خوش رہیں۔
آوارہ فکر

Popular Posts