اتوار, جنوری 9, 2011

کتا اور برکت

بچپن میں همارے بزرگوں نے بتایا که جس گھر میں کتا هو اس گھر میں برکت نهیں هوتی
مولوی صاحب نے بتایا که جس گھر میں کتا هو اس گھر میں رحمت کا فرشتہ داخل نهیں هوتا ہے
همارے دل میں کتے کے خلاف اتنی نفرت ڈالی گئی که میں کتے کے قریب بھی نهیں جاتا
کچھ یه هوا که بچپن ميں کتے نے کاٹ لیا
هوا اس طرح کهیں جارها تھا که ایک کتا کچی سڑک کے بیچ بیٹھا تھا
میں اس کے قریب سے گزرا اور مڑ مڑ کر پیچھے دیکھتا رہا که کاٹ ناں لے
لیکن کتا مزے سے بیٹھا رها
جب میں کوئی چالیس پچاس قدم چلا گیا تو میرا دھيان اس کتے کی طرف سے ہٹ گیا
تو جی اس کتی کے بچے نے بچھے سے آ کر کاٹ لیا
یه برکت کیا هوتی هے؟؟
رزق میں برکت
یعنی کچھ رزق کی فراوانی
لیکن جی هم نے دیکھا ہے
امیر گھروں میں کتے رکھنے کا رواج عام هے
یعنی کتا اور برکت اک ساتھ!!ـ
یا یه کہـ لین که کتوں کو امیر مالک رکھنے کی " جاچ " ہے
یورپ کے کتے اتنے سیانے هوتے هیں که مالک کو کام پر بھیج کر گھر پر ارام کرتے هیں

وھ تاریک راہوں په کیوں مارے گئے؟؟؟
ان کے باپوں نے ان سے جھوٹ بولا تھا

یه کتے کے ساتھ برکت کا کوئی تعلق هے بھی که نهیں
لیکن جی میں کتے کو پسند نهیں کرسکتا

3 تبصرے:

افتخار اجمل بھوپال کہا...

يہ برکت والی بات تو مجھے نہيں معلوم البتہ سنا ہے کہ کتا نجس جانور ہے ۔ ميں بھی کتے کو نجس سمجھتا ہوں مگر کتے سے ڈرا کبھی نہيں ۔ مزيد ميرا تجربہ ہے کہ سوائے باؤلے کتے کے کتا اسے کاٹتا ہے جو اس سے ڈرے
۔ آپ نے فرنگيوں کی بات کی وہ تو انسان سے زيادہ کتے سے پيار کرتے ہيں

عنیقہ ناز کہا...

مجھے ذاتی طور پہ کتا پسند نہیں۔ ایک تو پسند نہیں تھا دوسرے ایک دفعہ سات آٹھ سال کی عمر میں اس نے اتنا بھگایا کہ قریب تھا کہ کاٹ لیتا۔ بچت ہو گئ۔
البتہ یہ کہ میں نے یہ مشاہدہ کیا ہے کہ جس چیز پہ ہمارے معاشرے میں زور دینا ہو اسکے ساتھ کچھ مذہبی تاویل لگا دیتے ہیں۔ کتے کے ساتھ یہ کہ برکت نہیں رہتی یا یہ کہ رحمے کے فرشتے نہیں داخل ہوتے۔ روٹی پکاتے وقت گننا نہیں چاہئیے برکت ختم ہو جاتی ہے۔ مہمان رحمت ہوتے ہیں۔ رات کے وقت گھر سے نہیں نکلنا چاہئیے، شیاطین پھیلے ہوئے ہوتے ہیں۔ لوگوں کی یہاں رات کو ڈیوٹی لگی ہوتی ہے۔ اب تو دن میں بھی شیاطین اپنا کام جاری رکھتے ہیں۔ انہوں نے بھی دن رات کی تخصیص چھوڑ دی ہے۔

Lutf کہا...

کبھی کتا پالا نہیں لیکن تعلیم کی غرض سے کتوں کا مشاہدہ خوب ہے۔ اللہ تعالیٰ کی خوبصورت تخلیق کی اعلیٰ مثال ہے۔

کتے میں شعور کی موجودگی بھی محسوس ہوتی ہے اور جذبات کے اظہار کی قابلیت بھی۔ انسان کی خدمت میں یہ جانور صدیوں رہا۔

اولین بستیوں میں انسان کو درندوں سے محفوظ رکھتا- شکار کے لئے سدھایا گیا۔ اصحاب کہف کا پہرہ دیا۔ وفاداری کی ایسی مثالیں قائم کیں کہ انسان حیران رہ جاتا ہے۔

نجس ہونا تو بیماریوں سے تعلق رکھتا ہے۔ کتا اگر کھر کے باہر رہے، اس کو ٹیکے وغیرہ لگوائے ہوں تو پالنے یں کوئے مضائقہ نہیں۔

Popular Posts