اتوار, فروری 19, 2012

افلاطون مسائل اور حل

تیری بربادیوں کے منصوبے هیں آسانوں میں !!ـ
ڈاکٹر میڈ (عرفیت) جو که اصلی ڈاکٹر بھی نهیں تھے بس کہیں سے ڈاکٹری سیکھ آئے تھے
ان کے نام کے ساتھ شاه بھی لگتا تھا
اس لیے ایک دن باورے گاؤں کی ایک عورت ان کے پاس کچھ مسائل لے کر آئی تھی
جن کی بنیاد تھی جادو ٹونه
اور بی بی چاهتی تھی شاه جی سے روحانی حل !!ـ
مسائل تھے که کچے کوٹھے کی کچی سیڑهیں پر پاؤں پھسل پھسل جاتا هے
حالانکه بارش بھی نهیں هوتی
دروازے آواز کرتے هیں ، کتنی بھی آهسته سے بند کریں
سلائی مشین ، سوئیاں بڑی توڑتی هے
اور سوئیاں هیں بھی بڑی مہنگی که اس ٹونے میں مجھے اقتصادتی طور پر تباه کرنے کی سازش هے
بجلی پر بھی ٹونه کردیا کيا هےکه
میں بٹن باهر کے بلب کا دباتی هوں
لیکن بتی اندر کی جل جاتی هے
اور اندر کے بٹن سے باهر کی
اور کبی کبھی ایک بٹن سے دونوں هی جل جاتی هیں
ان سب مسائل کا بی بی جی روحانی حل چاهتی تھی
نان که تکنیکی
کچھ شاه جی بھی ان کی باتیں اس سنجیدگی سے سن رهے تھے که کوئی اور بنده اگر بات کرتا تو بی بی جی نے اس پر ملک دشمنی یا غداری کا الزام لگا دینا تھا
بلوچستان جل رها هے
بلوچی مر رهے هیں ، غائب هو رهے هیں
اور پھر مسخ شده لاشوں کی شکل میں مل رهے هیں
اور
یه غیر ملکی سازش ہے ، میڈیا کی غیر ذمه داری هے
بلکه کبھی کبھی تو بلوچ فوج کو بدنام کرنے کے لیے خود هی مر کر مسخ شده لاش بن جاتے هیں
میں ه بات لکھ رها هوں
تاکه سند رهے که
بکٹی کو مار کر فوج نے اپنے کیپٹن حمید کو بچا لیا
جس نے ایک لیڈی ڈاکٹر پر اپنی مردانگی کا مظاہره کیا تھا
اور پھر
چل سو چل
بلوچ اپنے حقوق کا مطالبه کر رهے هیں
اور حکومتی ادارے ان کو کچل رهے هیں
کسی بھی ملک نے پاکستان پر حمله نهیں کیا هوا هے
فوج کسی بھی غیر ملکی فوج سے نهیں لڑ رهی ہے
یه میں اس لیے لکھ رها هوں که اکهتر کی کاراوائی کو پاکستان ميں کچھ اس طرح سے پڑھایا گیا هے
که
پاک فوج اور هندو کی لڑائی میں
بنگالیوں نے غداری کی جس کی وجه سے شکست بلکه شکست فاش هوئی
لیکن
حقیقت یه تھی که
بنگالیوں نے اج کے بلوچیوں کی طرح اپنے حقوق مانگے تھے
جب ناں ملے
اور فوج نے ان کو کچلنے کی کوشش کی تو
بنگالیوں نے مزاحمت شروع کر دی
جس میں انڈیا نے ان کو تربیت دے کر مضبوط کر دیا
اور پھر
ملک ٹوٹ گیا
نوے هزار غازی بندے قیدی هوئے
اور قوم کو جھوٹ پڑھایا گیا که
هم بڑے بہادر
سیاستدان برے ، بنگالی غدار
اگر یه غیر ملکی سازش ہے تو دفاع کی ذمه دار فوج اب تک اس سازش کو بے نقاب کیوں نهیں کر سکی؟؟
قوم کو اعتماد میں کیوں نهیں لیا گیا
غر ملکیوں کے ایجنٹ کو ٹی وی پر دیکھا کر تو دیکھیں
عوام ان لوگوں کو ملک میں رهنے ناں دیں گے
لیکن اگر اپ خود هی غیر ملکیوں کی فوج هوں تو؟؟
بلوچستان صرف پاکستان میں هی نهیں هے اس کا جغرافیه ایران اور افغانستان تک پھیلا هوا هے
اور اس کی آزادی کی امریکی قرار داد !!!ـ
ایران کے گرد گھیرا تنگ کرنے والی بات بھی هو سکتی هے
لیکن اس وقت تک
ملک ٹوٹ چکا هو گا
مں نے پہلے بھی ایک پوسٹ میں خدشے کا اظہار کیا تھا که
یه ناں هو که
اگلا پاسپورٹ نیو کراوانے کے لیے
پنجاب کی ایمبیسی جانا پڑے
اس مسئلے کا حل کوئی تعویذ یا روحانی بابے نهیں هیں
اور ناں هی فج کی شان بڑھانے میں هیں
اس کا حل یه هے که
فوج بکٹی کے قتل کی معافی مانگے
ڈاکٹر شازیه کے مجرم کیپٹن حمید کو سر عام سزا دے
اور بکٹی کے قتل کے ذمه دار جرنیلوں کو تعزیرات پاکستان کے مطابق سزا دے کر بلوچوں کو راضی کیا جائے
ورنه
پھر
تیار هو جائیں که
اپ کا ملک هو گا اسلام اباد
اور چھاؤنی ره جائے
جهلم اور گوجرانواله والی
باقی جهان تک بات هم
تارکین وطن کی
تو جناب کی کے بڑوں بشمول جرنل عیوب ، سرمے والی سرکار جرنل ضیاع وغیره کی کوششوں سے پاکستان میں رهنے کے هی قابل نهیں رهے هیں
هم نے تو جی پاسپورٹ هی نیو کروانا ہے
پاکستان کا ناں هوا
امریکه برطانیه ، فرانس کا ناں هوا تو جاپان
یا پنجاب کا هو گا
اگوں تیرے بھاگ لچھیے

2 تبصرے:

Imran Iqbal کہا...

YEAHI KUCH TO SOCH SOCH KAR MEIN PAGHAL HO GAYA HUN... KAI HUM PAKISTANI HAIN YA KISSI AMERICA KI DIRTY COLONY...

پاکستانی کہا...

سچ ہمیشہ کڑوا ہوتا ہے

یہ سب عقل کے اندھے ہیں۔ آنکھوں کا اندھا تو دیکھ سکتا ہے لیکن عقل کا اندھا دیکھ کر بھی جہالت کے مظاہرے ضرور کرتا ہے۔

Popular Posts