جمعرات، 13 اکتوبر، 2011

قادیانی اور قادری لوگ


یه مولوی طاهر  قادری کے ماننے والوں کا قادیانیوں سے اختلاف جهاں تک مجھے سمجھ لگی هے صرف اس لیے هے که
لوگوں کو شک ناں هو جائے که دونوں فرقوں کی ڈیوٹی ایک هی ہے
پہلے کی برطانیه سرکار نے لگائی تھی اور دوسرے کی
امریکه سرکار نے لگائی هے که
کسی بھی طرح جهاد کو کینسل کرو
تھوڑی سی بھی سمجھ بوجھ رکھنے والا
اگر تحقیق کرئے تو مولوی طاهر قادری اور مرزا قادیانی کے حالات زندگی میں بڑی مماثلت پائی جاتی هے
هر دو نے خود کو اہلسنت کهلوایا
هر دو کو
اپنے دور کے میڈیا ميں ایک بڑا اسلامی عالم شو کیا گيا
هر دو کو عیسائی عالوں سے مناظروں میں جتایا گيا
هر دو نے عیسائی عالموں کی کتابوں کے مقابلے میں کتابیں لکھیں
هر دو نے روحانیت کی منزلیں طے کی
هر دو کو ان کے زمانے ميں هی عالموں نے جھوٹا قرار دیا
هر دو نے گوروں کے خلاف جدو جہد کو "خلاف اسلام " کا فتوی دیا
مرزا قادیانی نے
برطانیه سرکار کے خلاف والوں کے خلاف فتوا دیا
اور مولوی طاهر قادری نے امریکه کے خلاف
جدوجهد کرنے والے کے خلاف فتوا دیا
هر دو نے جهاد کے اعلان اور کرنے کی ذمه داری حکومتوں کی بتائی
یعنی که
اگر مشرف حکومت پر قبضه کر لے
یا امریکه افغانسان اور عراق پر حمله کرکے ایک ڈمی حکومت هی کیوں ناں بنا دے
اس کے خلاف
جدوجہد
طاهر القادری اور قادیانی مسلک کے مطابق غیر اسلامی هے
لیکن یه حکومتیں جو بھی ظلم بندوق اٹھانے والوں پر کریں گی وه عین اسلامی اور
شریعت طاهر القادری اور قادیانی کے مطابق هو گا
صرف ایک جگه فرق هے
که ایک نے نبی کا دعوا کر دیا
اور دوسرا صرف ولی هونے کا ڈرامه کر کے
مشن پر کا جاری رکھے هوئے هے
اور یه اس لیے هے که پرانے تجربے کے مطابق
اگر نبوت کا دعوه کروا دیا جائے تو
لوگ بدک جاتے هیں
جیسا که
اپ
سب دیکھ سکتے هیں
سب لوگ مرزایت کی جب بھی بات کریں کے
ختم نبوت میں هی اٹک کر ره جائیں کے
کیسا ڈرامه هے که لوگ
شخصیات کی بحث میں الجھے رهیں
اور سازشی لوگ
اپنے نظریات کی زهر پھلاتے هی چلے جائیں

ایک تبصرہ شائع کریں

Popular Posts