بدھ, جنوری 21, 2009

مقدس حق اور سنہرا خواب

منٹو کے ایک افسانے
دیوانه شاعر
کے شروع میں لکھا ہے
اگر مقدس حق دنیا کی متجسس نگاهوں سے اوجھل کر دیا جائے ، تو رحمت هو اس دیوانے پرجو انسانی دماغ پر سنہرا خواب طاری کردے ـ حکیم گورکی
یارو کتنی گہری بات کر گیا هے جی یه سیانا بندھ
اگر یه هو جائے جو که ناممکن ہے تو پھر اگر سنہرا خواب بھی ناں هوا تو ؟
اگر میں نے اس سے زیادھ لکھا تو کفر کا فتوی لگ جائے گا اور کوئی مجھے قتل کرکے غازی بن جائے گا
دیکھا ہے جو میں نے اوروں کو بھی دکھلا دے

کوئی تبصرے نہیں:

Popular Posts