ہفتہ, فروری 23, 2008

آپے شاھ

پنجابی میں کہتے هیں
اک نال نه کھڑے
دوجا کچھڑ چڑهے
اردو میں کہیں گے
مان نه مان میں تیرا مہمان
یه مشرف صاحب بهی کچھ سپیشل سی هی چيز هیں
پہلے یه فرمایا کرتے تهے که پاکستان کی خاموش اکثریت ان کو پسند کرتی ہے
جو که ایک مغالطه تها
اب جب که الیکشن میں جمہور نے ان کو ائینه دیکهایا ہے تو ان کو یقین هی نہیں آرها یا که واقعی مشرف صاحب ایکسٹرا بیوقوف هیں ؟؟
اس شخص کے جهوٹوں اور کہـ مکرنیوں کی ایک فہرست ہے
جب تاریخ دان تاریخ لکهے گا تو ان صاحب کا ایسا حلیه لوگوں کو دیکها ئے گا که
یارو گڑتھو چوہڑا بهی اس جهوٹے سید سے اعلی ظرف نکلے گا ـ
آب ایک بنده مانے هی ناں که اس کی بے عزتی هوئی ہے تو اس کو کون بے عزت کر سکتا ہے
ایک تمثیل ہے که
مشرف صاحب جیسے بندے کو لوگوں نے کسی بات پر سزا دی که
اس کو منه کالا کرکے گدهے پر بیٹھا کر شہر میں گمایا جائے اور پهر لتر لگائے جائیں ـ
مشرف ٹائیپ یه بندھ جب سزا بهگت کر فارغ هوا تو کہیں بیٹھا تها که کسی نے کہا
اور سناہے تمہیں لتر لگے هیں ؟؟
مشرف ٹائیپ کہتا ہے
نہیں اور لتر نہیں سی بس چهوٹی چهوٹی جوتیاں تهیں ـ
ایک نے کہا تمہیں تو گدہے پر بهی بیٹھایاتهاناں؟؟
مشرف ٹائیپ کہتا ہے
اؤے نہیں او کھوتا نہیں سی بس چهوٹی سی کهوتی تهی میرے تو پاؤں بهی نیچے لگ رهے تهے ـ
تماہارے تو گلے میں جوتوں کا هار بهی تها کسی نے لقمه دیا
تو
مشرف ٹائیپ کہتا ہے
اوئے پهر کیا ہے اس میں دو تو میری آپنی جوتیاں تهیں ـ
اور جو تمہارا منه کالا کیا گیا تها؟؟
مشرف ٹائیپ کہتا ہے
کتهے ؟ ان کو تو کالک لگانی هی نہیں آتی تهی میرا منه کتنی هی جگه سے کالاهوا هی نہیں تها ـ پانی کے دو هی چهینٹوں سے صاف هوگیا تها ـ
اب یارو اس قسم کے بندے کا کیا کریں ؟؟
ایسے بندے کو کون ہے جو بے عزت کر سکے ؟؟
مشرف شاھ صاحب شاھ بهی هیں
اب معلوم نہیں که کب شاھ بنے تهے ہمیں تو بنے بنائے هی مل گئے هیں ـ
ایسے هی لوگوں کو آپے شاھ کہتے هیں
یعنی بقلم خود
اپنے آپ
آپے شاھ
جاپان میں بڑے شاھ هوتے هیں
ہر چلنے والي چیز کو شاھ کہتے هں جاپانی لوگ
چلنے والی عورت بہرحال شاھ نہیں کہلواتی ـ
مشرف شاھ صاحب کو امریکه نے کسی چلنے والي عورت هی کی طرح چلایا هوا ہے
اور آپے شاھ هیں که چلے هی جائے جا رهے هیں ـ
جاپانی میں سائکل کو جیدین شاھ کہتے هیں
اور ٹرین کو
دین شاھ
گند اٹھانے والے ٹرک کو پھکا شاھ ـ
اور میں امریکه کے لیے چلنے والے شرفو شاھ کو آپے شاھ کا خطاب دیتا هوں ـ
کسی چالو عورت کو جاتا دیکھ کر تھڑے باز کہتے هیں
اے چلدی اے اوئے
اور مشرف صاحب بهی چلدے نے پر انہانوں صرف گورے هی چلاسکدے نے
بہتےپیسے والوں کام ہے جی ـ

کوئی تبصرے نہیں:

Popular Posts