ہفتہ, فروری 9, 2008

دھرتی کا غم

گلومنگ وارمنگ
یعنی دهرتی کا تپنا
تپنا جا تپ جانا پنجابی میں کسی چیز کے کافی گرم هو جانے کو کہتے هیں
تپان کسی کے غصے سے لال پیلا هونے کو بهی کہتے هیں
جیسے که لوها تپ کر لال هوجاتا هے
کسی غصه ور کو اب نظر انداز کرنے کی ضرورت کے وقت کہتے هیں که اب اس کی
پِتلاں تپ گئی هیں
اس بعد بهی اس کو چهیڑا تو کام خراب هو جائے گا
پتلاں تپنے کے محاورو کا پس منظر کچھ اس طرح ہے که
گهومنے واے بعض مشیونوں میں شافٹ پر بیرنگ کی جکه
پیتل کی ڈهلی هوئی دو نصف گولائی کی پیتلیں شافٹ کے اوپر نیچے هوتی تهی جن میں ایک سوراخ کے ذریعے گریس پہنچائی جاتی تهی
مشین کے زیاده چلنے سے یا گریس کی کمی سي یه پیتل گرم هو کر شافٹ کو جام کر دیا کرتے تهے
اور ان حل صرف پیتل بدلنے یا شافٹ کی تبدیلی بهی هوا کرتا تها
یعنی که مشین کی ایک بڑی خرابی هوتی تهی پیتل کا گرم هوجانا بهی ـ
اب دهرتی کو تپنے کابهی رونا رویا جارها ہے
لیکن اس دهرتی ماں کو تپایا کس نے هے؟؟
کسی اکیلے کاکام نهیں هے
جیسے که
پاکستان کے احساس لوگوں کو اکیلے مشرف صاحب نے تپایا هوا ہے
مگر
دهرتی ماں کو تپانے میں سب هی کا هاتھ هے ـ
ماں کو تپا کر کهاؤ گے کہاں سے اور پئیو گے کہاں سے؟؟
ماں غصے میں بهی بچوں هی کا سوچتی هے مگر
یارو جب ماں هی بیمار هوجائے اور پهر وه بچوں کے لیے کیا کرسکے گی؟؟
قطبین پر برف پگهل رهی هے
سمندروں کی سطح بلند هو رهی هے
بانگله دیش کی کتنی هی زمین سمندر برد هو چکی هے
لوگ گهر سے بے گهر هوچکے هیں
پر
یارو قدرت بندے کو ایسے هی عذاب نہیں دیتی
اللە کے کچھ اصول هیں جن کو کبهی بهی تبدیل نہیں کیا جاتا
ان میں ایک یه بهی ہے که هر دور میں انسان کي لیے ایک وارننگ سسٹم بهی هوتا ہے جو اس کو جو انسان کو صراط مستقیم کا بتاتا رهتا ہے
گلومنگ وارمنگ ، جہان موسموں کو '' اکڑ دکڑ '' کر دے گی وهاں نئی نئی بیماریاں بهی لے کر آئے گی
اور سب سے بڑا مسئله هوگا پانی کی کم یابی یا پهر عدم دستیابی کا ـ
کا واقعی پانی ختم هو جائے گا ؟؟
نہیں جی نہیں پانی ختم نہیں هوگا
نمکین هو جائے گا
یعنی سمندر میں گر کر روز مره کی زندگی کے لیے ناقابل استعمال ـ

پانی کی ترسیل کے کیا اصول هیں
قدرت کے
اور انسان کو کیا کرنا چاهیے ؟

قران میں الله جی کا فرمان ہو که
زمیں پر پانی ایک مقدار مقرر کر کے دی گئی ہے
یه بات وهاں آتی هے جہان اللّه جی نے دنیا بنانے کا بتایا هے
یعنی که اس زمین میں روز ازل سے جتنا پانی ہے اتنا هی رہے گا
نه اس سے کم هو گا اور نه اس سے زیاده
تو پهر بانگه دیش کیوں ڈوب رها ہے؟؟
یه پانی کہاں سے ارها ہے ؟؟
بهلے لوگوں قطبین پر جمے پانی کے سٹاک میں گرمی کا سوراخ کر دیا گیا ہے اس لیے وه پانی سمندر کی سطح کو بڑها رها ہے اور ـ ـ ـ ـ ـ ـ
کہتے هیں یورینیم کا ایک ایٹم ٹوٹنے سے اتنی حرارت خارج هوتی هے که دو ٹن پانی بهاپ بن کر اڑ جائے
اگر انسان اس ایٹمی طاقت کو لوگوں کو تباه کرنے کی بجائے سمندری پانی کو میٹھا کرنے پر لگائے تو ساری زمین کے صحرا گلزار بن سکتے هیں ـ
اتنی خوراک پیدا کی جاسکتی هے که دنیا میں کوئی بهی بهوکا نه رہے

کوئی تبصرے نہیں:

Popular Posts