جمعہ, جولائی 29, 2011

میرے عزیز هم وطنوں

ایگ پرانی کہانی هے که
کسی جگه ایک کفن چور رهتا تھا
جس کا نام تھا مشرف
جب وھ مرنے لگا تو اس نے بیٹے کو وصیت کی که
کوئی ایسا کام کرنا که لوگ مجھے اچھاکهیں
بیٹا بڑا فرمانبردار تھا
اس نے باپ کے مرنے پر خوش اخلاقی اور لوگوں کے کام انے کا سلسله شروع کردیا
تو لوگ
جن کے متعلق پنجابی کا محاورھ ہے که
داتری کوایک طرف اور زمانے کو دونوں طرف دنت هوتے هیں
کهنے لگے که بات تو کفن چور تھا لیکن بیٹا تو جی ولی هے ولی
بس جی اسی کو کهتے هیں
چنگیاں دے گھر برے تے بریاں دے گھر چنگے
اس پر فرمان بردار بیٹوں کو پریشانی هو گئی که اب کیا کریں
تو جی انهوں نے
اپنے زرداری نامی بھائی کو باپ کی نیک نامی پر لگا دیا
اس نے کیا کیا که
کفن چوری کے کام میں دھوم مچا دی
باپ تو کفن چوری کرکے لاش دفن کردیتا تھا لیکن
جی
اس باپ کے پتر نے یه کیا که لاش کو ایسے هی پڑا رهنے دیا
سارے زمانے ميں دھوم مچ گئی که
اس کا باپ اچھا آدمی تھا
پتر نالائق نکلا هے
پس ثابت هوا که فوج کو پہلے سیاستدانوں کو بدنام کرکے ملکی حالات کو خراب کرکے حکومت پر قبضه کرنے کے لیے راسته هموار کرنا چاهیے
تاکه میرے عزیز هم وطنوں سے شروع هونے والی تقریر کے لیے عوام ذہنی طور پر تیار هوں
جیسا که
لاطینی امریکه اور افریقه کے کچھ ممالک میں فوجی سربراھ کرتے هیں
اگر کوئی فوجی سربراھ ایسا ناں کرے تو فوج کی بدنامی هوتی هے
بہت اچھی بات ہے که پاکستان کی فوج سارے کام
قومی مفاد ميں کرتی ہے
ورنه
پته نهیں پاکستان کا کیا بنتا

3 تبصرے:

یاسرخوامخواہ جاپانی کہا...

ورنہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
خاور جاپان نا ہوتا اور۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جاپانی خاور کے کباڑ خانے میں مزدوری کر رہے ہوتے۔

کاشف نصیر کہا...

آپ بہت دور کی الائیں ہیں۔
لیکن جہاں سے لائیں ہیں خوب لائیں ہیں

گمنام کہا...

Who gave Pakistan nuclear parts? Israelis!

Who provided Pakistan nuclear parts? Israelis!
http://www.youtube.com/watch?v=JbKVvN8-vCA

Popular Posts