بدھ, اگست 13, 2008

اولمپک کی باتیں

جاپان میں اج کل اولمپک کی دهوم مچی هے جی ـ
هر بندھ ٹیلی وژن پر اولمپک کی کوریج دیکھ رها ہے ـ
جوڈو سے دلچسپی رکھنے والے لوگ تھامورا ریوکو کا نام تو جانتے هی هوں کے ـ
بارسلونا اولمپک میں جوڈو میں گولڈ میڈل لینے والی یه خاتون اب ایک بچے کی ماں هیں ـ
جاپان میں هر بندے کا نام اس کے نام اور خاندانی نام کا مجموعه هوتا ہے
تھامورا اور ریوکو سے مل کا تھامورا ریوکو بنتا ہے اس میں تھامورا فیملی نیم هے ـ
شادی کے بعد عورت اپنے خاوند کے فیملی نام سے جانی جاتی هے
اس لیے تھامورا بھی شادی کے بعد
تھانی ریوکو هو گئی هیں ـ
هو سکتا ہے که اپ نے تھانی ریوکو کا نام سنا هو
که اس خاتون نے اس نام سے بھی ایتھنز اولمپک میں گولڈ میڈل لیا تھا
جاپانی لوگ ان کو یاوارا چان کہتے هیں
یاوارا چان نام کا ایک مانگا کیریکٹر هوا کرتا تھا
یه کریکٹر فی میل تھا جوڈو میں انتہائی چابکدست کردار . اس لیے تھامورا کا نام بھی یاوارا چان پڑ گیا ـ
تھامورا کے گھر پہلے بچے کی پیدائیش پر جب صحافیوں نے ان کے تاثرات پوچھے تو
یاوارا چان کا کہنا تھا

تھامورا کے نام سے ایک گولڈ میڈل اور تھانی کے نام سے ایک گولڈ میڈل لیا اب خواہش ہے که ماما بن کر ایک گولڈ میڈل لوں
همارے بھی حمایتیں یاواراچان کے ساتھ تهیں مگر اس سال یاوار چاں گولڈ میڈل نہیں لي سکیں
مگر
دنیا کی تیسری مضبوط جوڈو خاتون اب بھی هیں ـ
سوله سترھ سال پہلے کی بات ہے میں بھی جاپان میں هی هوا کرتا تھا اور سپورٹس کے نام پر کراٹے کی ورزشیں کیا کرتا تھا
همارے ساتھ بھی کئی جوان لڑکیاں کراٹے سیکھتی تھیں اور ان میں بلیک بیلٹ بھی تهیں
فلموں کی بات چھوڑیں یه ایک حقیقت ہے که خاتون کتنی بھی ورزش کرلے یا شارپ هو جائے اس کے پینتروں میں ایک نسوانیت پائی جاتی ہے ـ
لیکن یاوارا چاں کے پیتروں میں ایک مردانه پن پایاجاتا تھا
مجھے ان کو ٹی وی پر دیکھے هوئے مقابلے یاد هیں
که جب یاوارا چان مقابل پر جھپٹتی تهیں تو ایسا لگتا تھا که باز نے چڑیا پر حمله کردیا هو ـ
لیکن جاپانی زبان کا ایک محاورھ ہے که
ہر بلندی پر سے بھی کچھ بلندیاں هوتی هیں
تو جی ایشن گیمز میں میں نے دیکھا که جب نارتھ کوریا که ایک کھلاڑی نے یاوارا چاں کو دھوبی پٹکا مار کر گرایا تو یاوار چان حیران هی رھ گئیں تھیں ـ
نارتھ کوریا ایک ایسا ملک هے که جو اہنی دیوار کے پيچھے هے
پرانے سویت یونین کی طرح
اس لیے اس ملک کے اندر کتنی صلاحیتوں کا گلا گونٹھا جارها ہے یا کتنے نئے تارے بن رہے هیں ان کی کسی کو خبر نهيں هوتی ـ
بہرحال جی
تھامورا ریویکو سان اب تک اولمپک میں پانچ میڈل لے چکی هیں جن میں سے دو گولڈ میڈل هیں ـ
اس کے بعد کیتھا جیما کا ذکر بہت چل رها ہے جی ہر طرف انہوں نے ایتھنز مین تیراکی میں گولڈ میڈل لیا تھا ور اب پیکینگ اولمپک میں بھی گولڈ میڈل حاصل کیا هے ـ
پچھلے دنوں سویمنگ سوٹ کے مسلے میں بھی ان کا نام اتا رها که کیتھا جیماسان سپیڈو نام کے میکر کے سوٹ کو ترجیع دے رہے تھے مگر اولمپک کمیٹی اس بات کو نہیں مان رهی تھی کیونکه سپیڈو نام کا میکر اولمپک کمیٹی کا منظور کردھ نہیں تھا
کیتھا جیماسان کے علاوه بھی کتنے هی کھلاڑیوں کے سپـیڈو کو ترجیع دینے پر اب سوینمگ سوٹ کی شرائط کو بدل کر دیا گيا ہے اور
اب کھلاڑی اپني مرضی کے سوٹ بہن سکتے هیں ـ
ان کیتھا جیما سان کو چائینی لوگوں نے
شاھ مینڈک
کا خطاب دیا ہے
بادشاھ ڈڈو
جاپانی میں کھایرو او کہیں گے
ایک تیراک کے لیے ایسا خطاب ؟
اپنااپنا قومی مزاج هوتا ہے ناں جی
ابھی اولمپک جاری هیں
مردانه جوڈو میں بھی شیبا سان اب تک گولڈ میڈل حاصل کرچکے هیں
اس کے علاوھ بھی جاپانی تو کتنے هی گولڈ میڈل حاصل کر لیں کے اور
هم پاکستانی ؟؟
ہم بڑی نازک مزاج قوم هیں اگر کسی نے اس بات کی طرف اشارھ بھی کیا که پاکستانی قوم کا اولمپک میں معیار کیسا رها تو
یه ناں هو که کچھ لوگ مجھے اوکشن میں کھڑا کر کے دھمکیاں دینے لگیں که تم پاکستان کو برا کهتے هو ـ

کوئی تبصرے نہیں:

Popular Posts