جمعہ, اکتوبر 2, 2009

موٹا پداں والا

موٹا پداں والاں بقول اس کے اپنے بڑا مشهور کاروباری اور سیاسی بندھ ہے اور لوگوں کے بقول بہت بڑی جوٹھ قسم کی چیز هے
پد بمعنی وھ هوا جو بندے کے نیچے سے نکل جاتی ہے انگریزی میں فراٹ کهتے هیں اور اگر بغیر اواز کے هو تو اس کو پنجابی میں پھوسی کهتے هیں ، وجه تسمیه موٹے کی پداں والا اس لیے هے که یه بندھ پد بہت مارتا هے ، حالانکه اس کے پد مارے اور چوّلیں مارنےکی ایک کی رفتار ہے
کچھ کردار هوتے هیں جن پر لکھا جانا چاھیے که لوگ ان کے شر سے محفوظ رهیں اور کچھ کردار هوتے هیں جن پر لکھا جانا چاھیے که یاد رکھنے کے قابل هوتے هیں ـ
تو جی اج موٹے پدان والے اور یملے پر لکھیں گے جس میں کچھ اور بھی کردار هوں گے
کیا آپ کو معلوم ہے که پنجابی میں جوٹھ قسم کی چیز کس کو کهتے هیں ؟؟
نئیں ناں ؟!!ـ
او جی ، جوٹھ کهتے هیں تھالی میں بچ جانے والے کھانے کو یا اس چیز کو جو کسی نے جوٹھی کر دی هو، اور جوٹھ قسم کا بندھ اس کو کہتے هیں جس کو زمانے بھر نے چکھ چکھ کر جوٹھا کر کے تھوک دیا هو ـ
موٹا پداں والا بڑا بسیار خور بسیار گو بھی ہے
موٹے پداں والے کا کھانے کا انٹرس (منه) تو بڑا ہے هی ان کا ایگزاسٹ بھی بہت بڑا ہے اس لیے لازماً توند (گند فیکٹری) بھی بڑی هی هو گی ـ
اس جوٹھ کی پچھلے دنوں ایک بھٹی معتبر نے نیا نیا جوٹھا کیا ہے اور اب اس جوٹھ سے جان چھڑانا چاھتا ہے لیکن جی موٹا پداں والا لیچڑ بھی ہےبلکل لسوڑے کی گٹھلی کی طرح ، اور بے عزتی پروف اتنا که آپ اس کے سامنے هی اس کی ماں بهن پر ڈنگر چڑھا دو یه مسکراتا رہے ـ
اس موٹا پداں والا کی پچھلے دنوں منڈی میں یملے کے ساتھ منه ماری هو گئی ، اب جی یه یملا بھی وکھری ٹائیپ کی چیز هے دنیا جہاں کے علم حاصل کیے هیں جی اس ، نے سوائے پسے کمانے کے ، ورزشی جسم ، کھانے پینے میں احتیاط ، ٹھاٹھ کا نمازی لیکن کیونکه باتیں جب بھی شروع کرے گا نظریات پر شروع کردے گا جن کی عام لوگوں کو سمجھ هی کم هو گی ، اس لیے لوگ اس کو پیٹھ پیچھے یملا کہتے هیں اور منه پر اس کے سامنے بیٹھ کر منه کھول کھول کر اس کی باتیں سنتے هیں اور پھر سیاسی پارٹیوں ميں ان باتوں کو اپنی تقریروں میں سناتے هیں ـ
اب جی سب بندے اس کو پیٹھ پیچھے یملا بھی کہتے هں لیکن یملے کے نالج کی بھی تعریفیں کرتے هیں کیونکه یملا بھلا مانس ہے اس لیے لوگ اس کو پسند بھی کرتے هیں ـ
لیکن سیانے بننے کوی کوشش میں مصروف بیوقوف لوگ یملے کے ساتھ کسی ناں کسی بات میں سنگ پھنسا کر بیٹھ جائیں گے که کج بحثی میں هی سہی اس کو لاجواب کرکے آس پاس والے لوگ میں کہـ سکیں که جی میں نے تو یملے کو لاجواب کردیا تھا ، میرے پاس بھی بڑا نالج ہے بس میں باتیں کم کرتا هوں ـ
اور یملا ہے که ایسے لوگوں کو بھی سمجھانے کی کوشش میں لگا هوتا ہے
ایک دن یملا هوئے والی والے بادشاھ ٹمبر مرچنٹ مسواک فروش کو کائینات کی ساخت میں وقت کی حثیت بڑی تفصیل سے بتا رها تھا ، بادشاھ کا منه کھلا تھا ور بڑے دھیان سے باتیں سن رها تھا که ماسٹر طفیل کا گزر هوا تو اس نے بادشاھ سے پوچھا کیا تم کو یملے( یملے کا اصل نام لے کر )کی باتوں کی سمجھ آ رهی ہے ؟؟
نئیں!!ـ
نئیں سمجھ تے نئیں آ رهی مگر جی یملا بات کر رها ہے تو جی اس لیےهو گی بڑی عقل کی بات ، اس لیے میں سن رها هوں
اس یملے کی پتلیں گرم کردییں جی پچھلے دنوں موٹے پدان والے نےـ
پتلیں گرم کرنا سمجھتے هیں آپ؟؟
او جی جن مشینوں کی شافٹ میں میگنٹ بننے کی وجه سے بیرنگ نهیں لگایا جاسکتا وھاں پیتل کی نیم گول پیکنگ رکھ جاتی هے جو نامواقف حالات میں گرم بھی هوجاتی هیں
اس لیے پنجابی میں مکینک لوگ کسی کو غصے میں دیکھ کر کهتے هیں اس کی پتلیں گرم هو گئی هیں ـ
یملے کی پتلیں گرم هونے کی وج یه تھی که یہاں ایک فراڈی لوگوں کا ٹولی هے جو ایک سود خور کے ڈیرے پر رهتے هیں اور اس سے سود پر رقم لےکر کاروبار کرتے هیں ، یه ٹولی زیادھ هی جھوٹی اور دھوکے باز ہے اس ٹولی میں شامل دو بھائیوں نے منتں کرکر کے یملے کو کجھ مشینں فروخت کر دیں جن میں یملے نے نقصان اٹھایا لیکن ایک مشین جو که خراب ہے اس پر یملے کی سوئی اٹک گئی که یه مشین واپس لو اور پیسے واپس دو
اور اس مشن کی واپسی میں آئیں بائیں کرتے ان کو ایک سال سے اوپر هو گیا هے ،
یملا ساری بات کو سمجھتے بوجھتے اپنی بھل مانسی کی وجه سے ان کو اہست آہست کہتا رهتا ہے که بندے بنو اور پسے واپس کرو یه ناں هو که میں حرکت میں آ جاؤں تو تمهارا تو ویزھ بھی کمپنی کا ہے پھر ساری زندگی روتے رهو گے
موٹے پداں والے نے یه بات سن کر جج بننے کی کوشش ميں دخل اندازی شروع کر دی یملے کو سمجھ لگ گئی که پداں والا اپنی کمینگی کی وجه سے فراڈیوں کا ساتھ دے گا لیکن جی پداں والا پھدک پھدک کر شروع هو گیا که جی جس بندے نے یملے کو فراڈ لگا لیا ہے وھ جی گریٹ بندھ ہے
وھ یملے سے زیادھ عقل مند ہے
یملا کہنے لگا اور اوئے موٹے پداں والے میں نے کب اپنے اپ کو عقل مند کہا ہے اوئے ؟؟
پنداں والا تو جی چیخ چیخ کر فراڈیے کو عقل مند ثابت کرنے لگا ور یملا تھا که شرمندھ هو رها تھا که لوکو میں عقلمد نهیں هوں ـ
لیکن فراڈیه کو فراڈیه کہو عقلمند ناں کہو ـ
بس جی بھر یملے کی پتلیں گرم هو گئیں
اور جب یملے نے موٹے پداں والے کو کہا که
اؤئے تم کو کس بہن کی بغل میں تیر لینے والے نے کہا ہے که یملا عقل مند کہلواتا هے ؟؟ اوئے سارے لوگ مینوں یملا نهیں کہندے ؟؟
پداں والا کہنے لگا تم غیر پارلیمانی زبان استعمال کررهے هو
کون سی پارلیمنٹ؟
اوئے تمہاری ـ ـ ـ کی پارلیمنٹ تو سیٹی کی زبان میں بات کرتی ہے
پداں والے کے تو جی پد نکل رهے تھے اور سب لوگوں کی طرف منه کرکے کہتا ہے که دیکھو یه یملا کون سی زبان استعمال کررها هے
سبھی معتبر لوگ پداں والے کو کہتے هیں که تم بڑے چوّل بات کر رهے هو یملا ٹھیک ہے باز آ جاؤ
پداں والا کهتا هے !!ـ او جی اس کی زبان ؟؟!ـ تو یعقوب نے کها
اور موٹے!!ـ یملے کو ساری زبانیں آتی هیں جب یملے کی پیتلیں گرم کرو گے تو یملا پنجابی کی گالیوں کو بھی نئی طرح دے کر گالیان دے گا ناں
اوئے موٹے کس بهن کی بغل میں تیر لینے نے تجھے جج مقرر کیا هے ؟؟
چل نکل یہاں سے ورنه میں کمہاروں کے ڈنگروں کے تمهاری خواتین سے رشتے بتانے لگوں گا
پاس کھڑے لوگوں کا یملے کی گالیان سن کا ہاسا نکل رها تھا
پداں والا کوئی اکسٹرا جوٹھ چیز هے
لیکن یملے ن اس کو بے عزت کرکے اپنی جان چھرائی ، اب جی لوگ چسکے لینے کے لیے یملے سے اس معاملے کی تفصلات پوجھتے هیں اور یملے کے انداز بیاں سے لطف لیتے هیں ـ
جمعے کی نماز پڑھ کر باهر نکلے تو پھر یملے کو لوگوں نے گھیر لیا
که پنداں والے سے کیا هوا
تو جی یملا کہانی سنانے لگا
که یہاں جاپان میں ایک ملک پانی کا بلبله ہے اس نے مجھے پرانے زمانے میں ایک بندے کی بابت بتایا تھا که وھ بندھ جس فیکٹری ميں کام لگا تھا اس کے مالک (ساچو ) کی بیوی کو ورغلا کر لے بھاگا ـ
تو مجھے بڑا افسوس هوا تھا که کتنا احسان فراموش بندھ ہے که جس ساچو نے اس کو سہارا دیا اسی کا گھر اجاڑ دیا ـ
ویزے کے لیے کوئی اور عورت بھی تو تلاش کی جا سکتی تھی ، اس لیے میں نے جاپان میں ایک تو اُس بندے کو کمینه جانا تھا یا پھر اج اس موٹے پداں والے کو ایکسٹرا جوٹھ پایا ہے
تو یملے کی یه بات سن کر مولوی صاحب کا هاسا نکل گیا اور بتانے لگے که
یار جی یه دونوں بندے ایک هی بندھ هیں یه پداں والا هی تھا جو ساچو کی بیوی کو بمع ایک بڑي رقم کے لے کر فرار هو گیا تھا
مولوی صاحب کا یه انکشاف سن کر یملے کو اپنے یملے هونے کا بڑی شدّت سے احساس هوا

2 تبصرے:

asma کہا...

خاور چچا زيادہ ميٹھا کھانا بند کر ديں بی بی سی سے مجھے پتہ چلا ہے کہ ايسی باتيں زيادہ ميٹھا کھانے کی وجہ سے نکلتی ہيں

جعفر کہا...

یہ جی یملا تو کچھ جانا پہچانا لگتا ہے۔۔۔۔

Popular Posts