منگل, فروری 4, 2014

طالبان کی دو قسمیں


طالبان کا موضوع بڑا ہی سنجیدہ اور ذمہ داری سے بات کرنے کا طالب ہے ،۔
اج کے حالات میں ایک ام آدمی کیسے محسوس کر رہا ہے یا کہ اس کو کیسا محسوس کروایا جا رہے ہے ، اس کے متعلق تو لوگ لکھ ہی رہے ہیں ۔
اور انے والے زمانوں کا تاریخ دان  ان کی تحاریر سے جو نتائج اخذ کرئے گا ، وہ پڑے الجھے ہوئے ہوں گے، اگر کسی کو ہماری تاریخ  مرتب کرنے کی دلچسپی محسوس ہوئی تو !!!ْ۔
جہاں تک میں نے محسوس کیا ہے ، اپنے محدود سے مطالعے اور مشاہدے سے ، کہ طالبان  ! جن کو ہم ان دنوں  دوہزار چودا میں طالبان کہتے ہیں ۔، ان کو دو کیٹاگری میں تقسیم کرنے کی ضرورت ہے ،
ایک افغان طالبان ،
اور دوسرے پاکستانی طالبان ۔
افغان طالبان کی پدائش ہمارے سامنے ہوئی ہے ، نوے کی دہائی کے دوسرے “ہاف” میں ،  افغانستان سے غیر متوقع طور پر سویت یونین کی فوجوں کے انحلا سے  پیدا ہونے والے طاقت کے خلا سے جو انارکی پیدا ہوئی تھی ،اس کے نتیجے میں کو طاقت پیدا ہوئی یا کہ پیدا کی گئی وہ تھی طالبان، ۔
ان دنں کے حالات پر نظر رکھنے والے لوگ جانتے ہیں کہ افغانستان ایک قسم کا اکھاڑا بنا ہواتھا ، جہاں مختلف قبائل اپنی اپنی طاقت کے مطابق زمین اور وسائل پر قبضے کے لئے قتل و غارت گری میں مشغول تھے ،۔
ان حالات میں پاک فوج کی کوشش سے ایک حکومت کے قیام کے لئے طالبان کو تیار کیا گیا ۔
جو طالبان بعد میں سامہ بن لادن کی وجہ سے امریکہ کے معتوب  ٹہرئے!!۔
تو  پاک فوج  امریکہ کی حمایت میں طالبان کے بھی خلاف کمر بند ہوئی ۔
لیکن افغان طالبان نے کبھی بھی پاکستان کے خلاف نہ تو کوئی بیان دیا اور نہ ہی کوئی حرکت کی ۔
پاکستانی طالبان!!۔
وہ لوگ ہیں  جو کہ افغانی طالبان کو پاکستان میں پناھ دینے کی پاداش  میں ڈرون حملوں کا نشانہ بنتے رہتے ہیں ۔
افغانی طالبان کو پاکستان میں پناھ دینے والے لوگ ان کو طالبان سمجھ کر نہیں بلکہ کئی رشتون اور ناتوں کی وجہ سے پناھ دیتے ہیں ۔
لیکن جب ڈورون حملہ کرتا ہے تو
بقول شخصے ۔ چنوں کے ساتھ گھن بھی  پس جایا کرتا ہے ۔
تو جی پاکستانی طالبان وہ ہیں جو “جبر “ کی پیدا وار ہیں ، اور یہ لوگ جبر کے خلاف جدوجہد میں “ مبتلا” ہیں ۔
یہ لوگ پاکستان کے حکومتی اداروں پر فوج پر اور پولیس اور دیگر پر حملے کرتے ہیں ۔
تیسری طاقت!!۔
ان دو طالبان کے علاوہ ایک تیسری طاقت بھی ہے ، اس کو اپ کوئی بھی نام دے لیں ، میں ان کو فرشتے کہتا ہوں ۔
یہ وہ لوگ ہیں جو پاکستانی طالبان کو بدنام کرنے کے لئے “عوامی” مقامات پر حملے کرتے ہیں ۔
پاکستان میں پاکستانی طالبان ، افغانی طالبان اور تیسری طاقت کو اس طرح خلط ملط کر کے دیکھایا جا رہا ہے کہ پوری قوم ایک کنفیوژن کا شکار بنی ہوئی ہے ۔
میں نے سبھی دہشت گرد “چیزوں “ کا لکھ دیا ہے
اب
اپ خود فیصلہ کریں کہ کون کیا کر رہا ہے اور کیوں کر رہا ہے

1 تبصرہ:

گمنام کہا...

دو طرح کے "طالبان" ، " تیسری طاقت " کے امیر خود کیوں مقرر کرتی ہے ؟

Popular Posts