ہفتہ, اکتوبر 29, 2011

بنکاک ڈوب رها هے


تھائی لینڈ کا دارلحکومت بنکاک ، پانی میں ڈوبا هوا هے
دو هزار دس کی مردم شماری کے مطابق
اس شهر کی ابادی کوئی ساڑهے بیاسی لاکھ هے
اپریل ستره سو بیاسی میں تھائی لینڈ کا کیپیٹل بننے والے اس شهر میں هر مہینے
کوئی باون هزار نئی کاروں کا اضافه هوتا هے
سات سو چار سڑکوں اور کوئی چار هزار تین سو پانچ گلیوں پر مشتمل یه شهر هر روز
کوئی آٹھ هزار نوسو ٹن کوڑا کرکٹ پیدا کرتا هے
بنکاک کے پرانے ائر پورٹ تک میں پانی کھڑا هے
جهاز اڑ نهیں سکتے


پانی هے که پشتو محاورے کے گل محمد کی طرح بس کھڑا هی هو چکا هے

گرم مرطوب موسم والے اس شهر میں جانے کو دل چاہتا هے
لیکن چار یا پانج دن کے بعد نکل بھاگنے کو مچلنے لگتا هے
میں نے اس شهر میں ٹریفک کی کھنٹوں جام بھی دیکھی هے اور
ٹرین کے پل بنتے اور ان پر ٹرین کے چالو هونے کو بھی دیکھا هے
پچھله دفعه میں بنکاک گیا تھا
دو هزار ایک کے اگست میں
پاکستان سے میرا چھوٹا بھائی غلام مرتضی (ننھا) اور ایک کزن عمر فاروق بھی آئے تھے
چار که پانچ دن سیر وغیره کی تھی
اس کے بعد بنکاک جانے کا موقع هی نهیں ملا
جاپان کی کئی بڑی بڑی کمپنیان اس شهر میں اپنی فیکٹریاں رکھتی هیں
که مزدوری سستی هے
اور
ماحول محفوظ



سونی ، توشیبا، اور کئی دوسری کمپنیوں کی فیکٹریاں پانی میں ڈوب چکی هیں
ایک میٹر سے زیاد پانی گوداموں اور فیکٹریوں میں داخل هو چاک ہے
یهاں جاپان مين ٹی وی پر دیکھا رهے تھے که
جن سڑکوں پر گاڑی چلا کر فیکھری جاتے تھے
اس پر کشتی میں فیکٹری تک گئے هیں
اور سڑک پر پانی ميں ڈوبے هوئے ٹرک جن کے صرف چھت نظر آرهے هیں
جا بجا پڑے هیں
فکٹری کا جو ملازم تھا اس کے منه سے بار بار
مشینوں کے بارے فکر مندی کے الفاظ نکل رهے تھے
مشینیں جو که مال کی ماں هوتی هیں
ایجادات کو جنم دیتی هیں
ان کی فکر کرنے والے بندے کے احساسات کوئی
تکنیکی ذہن رکھنے والا بنده هی جان سکتا هے
یا میرے جیسا
مکینک ٹائیپ بنده که
مجھے اوزاروں سے بڑے محبت هے
توشیبا اور سونی کے علاوه بھی کئی جاپانی کمپنیوں نے
جن چیزوں کو اگلے مهینوں میں مارکیٹ میں لانے کا وعده کیا تھا
ان وعدوں کو کینسل کر رهی هیں
بنکاک میں پانی کھڑا هے
لاشیں
کوڑا کرکٹ
ٹوائیلٹوں کا پانی
اور کئی عوامل مل کر بیماریوں کی جو فضا بنائیں گے
ان کے متعلق ایک فکر مندی کی فضا چھائی هوئی هے
آزاد لوگوں کی سرزمین کو ویت نام کی جنگ کے دوران جو کلچر امریکی سپاهیوں نے دیا تھا
صرف اسی سے واقف
بہت سے پاکستانی تھائی لینڈ کا ایک علیحده هی ایمیج رکھتے هیں
تھائی کی اس مصیبت کا پاکستان میڈیا ،
کیا ذکر کررها هے؟؟
کچھ ذکر هے بھی که نهیں ؟؟

اتوار, اکتوبر 16, 2011

ملک بخیل اکبر



بخیل بھی ایسے ایسے هوتے هیں که
سخی کو تو حیران کرتے هی هیں
عام سابنده بھی حیران هو جاتا هے
اور
سب سے بڑا بخیل هو تا هے معلومات دینے میں بخیل
یهاں جاپان میں بہت سے بخیل هیں
لیکن همارے جاننے والا ایک خاندان ہے
جس خاندان کے بہت سے افراد جاپان میں هیں
اس خاندان کی کوالٹی هے که
اگر کوئی
صاحب ان خاندان کے فرد سے پوچھے
که
کیا حال ہے؟؟
تو
یه صاحبان ایک لمحے کے لیے
سوچیں گے
که
حال بتانے کی معلومات اس بندے کو دینے سے اس بندے کو کوئی کاروباری فائده تو نهیں هو رها

تو هی بتائیں کے که مزاج کیسے هیں
هے ناں بخیلی کی
انتہا
یهاں بلاگ لکھ لکھ کر
کتابیں لکھ لکھ کر
اور لوگوں کو متوجه کرکرکے معلومات بانٹنے والے
قبیلے کے لوگ بھی هیں !!ـ
جن میں خاور بھی شامل ہے
کمتر درجے کا هی سہی!!ـ

پاگل هیں ناں جی معلومات بانٹنے والے لوگ
لیکن یارو انے والے زمانوں میں
اگر کسی کا نام اگر لوگ جانتے هوں گے تو

کس کا جانتےهوں گے
ملک بخیل اکبر کا
یا میرے قبلیے کے لوگوں کا؟؟؟

جمعہ, اکتوبر 14, 2011

میں بزدل هوں


یارو اس زمین پر سب سے قدر والی چیز ہے
زندگی
جی هاں جان
جس گے لیے بند کیا کیا جتن کرتا ہے اور
کشٹ اٹھاتا ہے
پینترے بدلتا هے
لیکن یارو کچھ لوگ هیں که یه قیمتی ترین چیز
جان!!ـ
ہتھیلی پر لیے پھرتے هیں
الله کے نام پر دینے کےلیے
اور
جان دے کر کهتے هیں
جان دی که دی هوئی اسی کی تھی
حق تو یه هے که حق ادا ناں هوا
جب میت گھر پہنچتی ہے تو
ماں کو مبارک ملتی ہے
شهید کی ماں
میں بزدل هوں که
یا
جان کے لیے هلکان
یا که اپنی ذمه داریوں کی مجبوریوں میں بندھا
لیکن
مجاهدوں کو دل ميں اچھا جانتا هوں
میں ان کے ساتھ شامل نهیں هوں
لیکن
ان کی عزت کرتا هوں
هاں پاکستان کے اخباری تعلیم یافته لوگ کہـ سکتے هیں که
لیکن
جی
وه خود کش حمله
اسلام میں تو خود کشی حرام هوتی هے

قران میں هے که جنگ ميں تمهارا پاؤں پیچھے نهیں پڑنا چاهیے
مگر جنگ کے حربے کے لیے
یعنی که مرجاؤ یا جیت جاؤ
تیسرا اپشن نهیں ہے
اور یه هے جنگ کا حربه
ناں که خود کشی
لیکن اس سے بھی ضرور ی بات یه هے که
پاکستان ميں هونے والے بم دھماکے کیا وقعی خود کش حملے هوتے هیں ؟؟
اگر هاں تو
جنرل ضیاع کے دور ميں شروع هوئے یه حملے ضیاع کے دور میں بم دھماکے کیوں کہلواتے تھے
اور اج خود کش حملے کا نام کس نے دیا هے
اور یه خود کش کیا درختوں پر لگتے هیں که کبھی کسی کے ماں باپ بھائی بہن کی کهانی غیر سرکاری ذریعے سے ملی هی نهیں هے
ڈرون حملوں ميں مرنے والوں کے لواحقین
بدله کس سے لیں کے؟؟
حمله آور لوگوں سے هی لیں کے نان جی؟؟
کون هیں یه حمله آور لوگ جو پاکستانیوں کو مار رهے هیں؟؟
نیٹو اور اس کے اتحادی بشمول پاک فوج اور حکمران !!ـ
تو جی حملے بھی انہی پر هوں گے ناں جی

غیروں سے كها تم نے غیروں سے سنا تم نے
کچھ هم سے کہا هوتا کچھ هم سے سنا هوتا

جمعرات, اکتوبر 13, 2011

قادیانی اور قادری لوگ


یه مولوی طاهر  قادری کے ماننے والوں کا قادیانیوں سے اختلاف جهاں تک مجھے سمجھ لگی هے صرف اس لیے هے که
لوگوں کو شک ناں هو جائے که دونوں فرقوں کی ڈیوٹی ایک هی ہے
پہلے کی برطانیه سرکار نے لگائی تھی اور دوسرے کی
امریکه سرکار نے لگائی هے که
کسی بھی طرح جهاد کو کینسل کرو
تھوڑی سی بھی سمجھ بوجھ رکھنے والا
اگر تحقیق کرئے تو مولوی طاهر قادری اور مرزا قادیانی کے حالات زندگی میں بڑی مماثلت پائی جاتی هے
هر دو نے خود کو اہلسنت کهلوایا
هر دو کو
اپنے دور کے میڈیا ميں ایک بڑا اسلامی عالم شو کیا گيا
هر دو کو عیسائی عالوں سے مناظروں میں جتایا گيا
هر دو نے عیسائی عالموں کی کتابوں کے مقابلے میں کتابیں لکھیں
هر دو نے روحانیت کی منزلیں طے کی
هر دو کو ان کے زمانے ميں هی عالموں نے جھوٹا قرار دیا
هر دو نے گوروں کے خلاف جدو جہد کو "خلاف اسلام " کا فتوی دیا
مرزا قادیانی نے
برطانیه سرکار کے خلاف والوں کے خلاف فتوا دیا
اور مولوی طاهر قادری نے امریکه کے خلاف
جدوجهد کرنے والے کے خلاف فتوا دیا
هر دو نے جهاد کے اعلان اور کرنے کی ذمه داری حکومتوں کی بتائی
یعنی که
اگر مشرف حکومت پر قبضه کر لے
یا امریکه افغانسان اور عراق پر حمله کرکے ایک ڈمی حکومت هی کیوں ناں بنا دے
اس کے خلاف
جدوجہد
طاهر القادری اور قادیانی مسلک کے مطابق غیر اسلامی هے
لیکن یه حکومتیں جو بھی ظلم بندوق اٹھانے والوں پر کریں گی وه عین اسلامی اور
شریعت طاهر القادری اور قادیانی کے مطابق هو گا
صرف ایک جگه فرق هے
که ایک نے نبی کا دعوا کر دیا
اور دوسرا صرف ولی هونے کا ڈرامه کر کے
مشن پر کا جاری رکھے هوئے هے
اور یه اس لیے هے که پرانے تجربے کے مطابق
اگر نبوت کا دعوه کروا دیا جائے تو
لوگ بدک جاتے هیں
جیسا که
اپ
سب دیکھ سکتے هیں
سب لوگ مرزایت کی جب بھی بات کریں کے
ختم نبوت میں هی اٹک کر ره جائیں کے
کیسا ڈرامه هے که لوگ
شخصیات کی بحث میں الجھے رهیں
اور سازشی لوگ
اپنے نظریات کی زهر پھلاتے هی چلے جائیں

اتوار, اکتوبر 9, 2011

پاک تاریخ ، ناپاک تاریخ


میں اس بات کو بہت ضروری سمجھتا هوں که
پاکستان ميں دی گئی جھوٹ کی تعلیم پر بات هو
اور کئی طرح کے لوگوں میں یه بات هونی چاهیے
تاکه
معاملات کے سمجھنے کی بات چلے
لیکن مسئله یه هے که
تین نسلیں اس جھوٹ کی تعلیم پا کر تیار هوئی هیں
اس لیے
اصلی معاملے تک پہنچنا مشکل هے

میں کوئی اعلی تعلیم یافته بنده نهیں هوں که
باتوں میں کہرائی پیدا کرکے
معاملات کو الجھاتا هی چلا جاؤں
میں بات کروں گا که میرے طبقے کے لوگ کیسے سوچتے هیں
دوکاندار، ریڑھی بان
کلرک
یعنی که عام سے لوگ
عوام
جولوگ که معاشره هوتے هیں
بات وهاں سے شروع کرتے هیں که
قائد اعظم محمد علی جناح کو
کراچی میں هی پیدا کرنے کی کیا ضرورت تھی
اور اس کے پیچھے کیا مفادات یا نظریات تھے
کیا فرق پڑتا تھا که اگر
بابے کی پیدائیش
سنده کے اسی گاؤں کی رہنے دیتے جهاں وه پیدا هوا تھا
جهاں پرائمری سکول میں جایا کرتا تھا؟؟
اس کے بعد
جب بابے نے فوج کے چیف اف ارمی سٹال
کو کشمیر پر کنٹرول کا حکم دیا تو
اس کے جواب اور کردار پر بات هونی چاهیے
اور پھر
اج کے ازاد کشمیر(بقول پاکستان) کو کس نے آزاد کروایا تھا
اور اس وقت
فوج کیا کررهی تھی؟
اس کے بعد پینسٹھ کی جنک
کس نے شروع کی
اور اس کا نتیجه کیا نکلا
سنده طاس معاهده
اور پنجاب کے دریا راوی اور چناب کیا هوئے که
اج راوی ایک بڑے سے نالے کا منظر پیش کرتا هے
سانحه مشرقی پاکستان
جس کو عام لوگ
اکہتر کی جنگ کهتے هیں
میرے طبقے کے لوگ یه یقین رکھتے هیں که
هندو نے مشرقی پاکستان پر حمله کردیا تھا جس میں بنگلیوں نے غداری کی اور هندو کا ساتھ دیا جس کی وجه سے
پاک فوج کو شکست هوئی
ورنه جی پاک فوج تو بڑی ٠٠٠٠٠٠٠
لیکن اصل بات کیا تھی؟؟
الیکشن میں مجیب کی جیت
فوج کے سربراه کا کردار
مشرقی پاکستان کا اپنے حقوق کا مطالبه
اور فوج کی داد شجاعت
ترانے
حسن بنگال کی پامالی
مکتی باہنی کی مزاحمت
اس کے علاوه کی بهت سی باتوں کے بعد جا کر کهیں
پلٹن میدان سجتا هے
جهاں جرنل اروڑا نے پاک جرنیل نیازی کو بے عزت کیا تھا
الیکشن کے بعد پلٹن میدان سجنے تک کی باتیں
پاک تاریخ میں سے غائب کیوں هیں؟؟
جرنل ضیاع کا نوے دن
نظام مصطفے
هارس ٹریڈنگ
ریفرینڈم
اور اس ریفرنڈم میں کیے گئے سوال کا تجزیه هونا چاهیے
کارگل کی جنگ اور اس میں کیا هوا
کسی نےکیا؟؟
ان چیزوں پر بات هونی چاهیے
که کیا بات هے که جهاں جهان فوج کی بے عزتی هوتی نظر آئے وهاں باتوں کو چھپایا جارها هے
اور جهان جهاں فوج کا کردار چھپایا جاسکتا هے
وهان جھوٹ کی تکرار سے فوج کو پرموٹ کیا جارها هے؟
باقی جهان تک بات هے پاکستان بننے سے پہلے کی تاریخ کی تو
اس کو عالم اسلام کی تاریخ کے نام پر پاکستان ميں
کچھ اس طرح پڑھایا جارها هے که
لطیفے سے لگتے هیں جی
ایک تھا بادشاه
جو که ٹوپیاں بنا کر گزارا کرتا تھا
اوئے بھولے لوکو
ٹوپیوں کی کمائی سے تو لال قلعے کی ٹیپ بھی نهیں کروائی جاسکتی
اور اس بادشاه کو تو سکھوں کے قتل اور بھائیوں کے قتل کے ساتھ ساتھ ابا جی کو قید رکھنے جیسی مصروفیات بھی تھیں
ٹوپیاں بنانے کا وقت کب ملتا تھا جی ؟؟

یقین جانیں که هندو سے میں بھی اندر سے نفرت محسوس کرتا هوں
که ایک احساس جاگزیں هو چکا هے میرے اندر
که
هندو بڑا چالاک هے
دھوکه کرجائے گا
لیکن جب یه سوچتا هوں که
هند پر حملے هی هوئے هیں
هند کبھی بھی جارحیت کا مرتکب نهیں هوا تو؟؟
بھی جی هندو چالاک هی محسوس هوتا هے
یه هے
تعلیم کا اثر

جمعہ, اکتوبر 7, 2011

الله اسے غریق رحمت فرمائے

جوان عمری کی موت هے که اپنی عمر کی پچاسویں دھائی میں هی دنیا سے کوچ
سٹیو!!ـ
همارے عهد کا ایک عظیم ادمی جو که
امیر بھی هوچکا تھا
ستانوے تک لوگ کہنے لگے تھے که میک (ایپل کمپیوٹر کی کمپنی)مر جائے گا
لیکن اٹھانوے میں آئی میک کی مارگیٹنگ نے
میک کو ایک نئی زندگي دی

یه آئی میں میں نے ننانوے کے اپریل میں لیا تھا
انہی دنوں کهیں پڑھا که جاپان کی ٹوکیو یونورسٹی نے
اپنی تحقیقات کے لیے میک کے کمپیوٹر لیے هیں
ائی میک کے اس ماڈل میں پہلی بار ڈی وی ڈی آئی تھی
کام پر ایک بٹ صاحب نے پوچھا تھا که خاور صاحب اپ کے گھر میں تو ڈی وی ڈی پلئیر بھی هو گا!!ـ
میں نے جواب دیا که ڈی وی ڈی چلانے کی مشین بھی هے
تو انہوں نے تاسف امیز
نظروں سے دیکھا تھا
که
بڑے چھاڈو هو جی تسی لوگ بھی
کیونکه ان دنوں کسی کے پاس ڈی وی ڈی پلئر هونا بڑي بات هوا کرتی تھی

اور یه پاور بک میں دو هزار تین میں استعمال کررهاتھا
جس ميں عربی قیورٹی کی سهولت کی وجه سے میں وکی پیڈیا پر کام کرنے اور اپنا اردو کا بلاگ بنانے کے قابل هوا
که اس وقت تک لوگ بل گیٹس کی کھڑکیوں پر چوری کا انپیج استعمال کیا کرتے تھے
اُس زمانے میں میرو اردگرد کے لوگ یونکس استعمال کرتے تھے
جن میں میں ایپل والا " اوپرا اوپرا " سا لگتا تھا
ونڈو والے تو اُن لوگوں کے لیے قابل نفرین تھے جی

سٹیو کے مرنے سے دنیا کا کچھ نقصان نهیں هو گا
که
انے والے زمانوں کے لوگ بڑے هی ٹیلنٹ والے هیں
لیکن
میرا دل سٹیو کے مرنے پر اداس ضرور هوا هے
الله اسے جنت نصیب کرنے
که
هر کسی کو هر چیز الله هی
عطا فرماتا هے

منگل, اکتوبر 4, 2011

صدقه اور بلائیں

هم جن چاولوں کو لونے (نمک والے)چاول کہتے هیں ، دوسرے لوگ ان کو پلاؤ کا نام دے کر کھاتے هیں
جس پنجابی میں مسی روٹی کہتے هیں اس کو یورپی لوگ ، پیزا کا نام دے کر کھاتے هیں
اسی طرح کی بہت سی چیزیں هوتی هیں جن کے نام یا تو زبان کی وجه سے بدل جاتے هیں یا ماحول کی وجه سے
پاکستان میں
چیزوں کے نام بدل دئے جاتے هیں
لوگوں کو بیوقوف بنانے کے لیے
دستور کو آئین کا نام دے کر عام لوگوں کے فهم سے دور کردیا جاتا هے اور
لینے والے هاتھ سے دینے والا هاتھ بهتر هونے كو
اس طرح غلط كر دیا جاتا هے كه بھیک لینے والا داتا بنا بیٹھا هوتا هے
خود کو عظیم اور نسلی اور پته نهیں کیا سے کیا منوانے کے لیے مسخروں کی طرح کی خرکتیں کرنے والے
مقدس لوگ
بھیک کھاتے هیں
وه بھی لوگ هیں جن پر قبول ان کے صدقه ان پر حرام هے
صدقه جس کے متعلق
کها جاتا هے که
صدقه بلاؤں کو کھا جاتا هے
لیکن خود پر صدقه حرام هونے کا کہنے والوں میں ایسے ایسے لوگ پائے جاتے هیں
جن کےمتعلق
خاور کهتا هے
که یه وه بلائیں هیں
جو صدقه هی کھاجاتی هیں

صدقه چاہے کافروں نے هی دیا هو
ایڈ کے نام پر
دوسری دنیا میں صدقه بلاؤں کو کھاتا هو گا
پاکستان میں
ایسی ایسی بلائیں هیں جو
جو
صدقه هی کھا جاتی هیں

Popular Posts