اتوار، 31 اگست، 2008

وکی پیڈیا کے لیے دعوت

وکی پیڈیا
ایک انسائکلوپیڈیا ہے جو بہت سی زبانوں ميں معلومات مہیا کرتا ہے
اس انسائکلوپیڈیا میں اردو کا وکی پیڈیا بھی هے !!ـ
کیا آپ نے کبھی اس سا'ییٹ پر ایکسس کیا ہے ؟؟؟؟
http://ur.wikipedia.org/wiki/
نہیں !!!ـ
تو جی پھر میں کہنے پر مجبور هوں گا که اپ ابھی تک ایک دنیا کی سیر سے محروم رہے هیں ـ
آپ ایک دفعه اس پر وزٹ کر کے دیکھیں آگر اپ ایک علم دوست شخصیت ہیں تو اپ اس سے ضرور متاثر هوں گے
وکی پیڈیا پر اردو ٹیکسٹ کے نام سے ایک بہت هی فعال اور گم نام رکن هیں
جی اردو ٹیکسٹ صاحب
انہوں نے اج میل کی ہے وکی کے سارے ممبران کو جو که مجھے بھی وصول هوئی ہے
یه الفاظ اپ کو بھی مخاطب کر رهے هیں ـ

اردو ویکیپیڈیا ایک ایسی ویب
> سائٹ ہے کہ جہاں مختلف علوم پر
> بکھری ہوئی
> معلومات کو نا صرف یکجا کرنے کی
> کوشش کی جارہی ہے بلکہ ان میں
> اضافہ بھی
> کیا جارہا ہے۔
>
> وکیپیڈیا کی روایت کے مطابق 10000
> مقالات کی تعداد کو دنیا بھر میں
> تیسرے
> درجے پر فائز کیا جاتا ہے۔
>
> اردو جاننے والوں کے لیۓ اس سے
> بہتر تحفہ کیا ہوگا کہ اردو زبان
> کو دنیا
> پھر میں جاری اس مقابلے میں تین
> اولین درجات میں پہنچادیا جاۓ۔
>
> کسی بھی قوم کا تشخص اور قوم کی
> ترقی کا انحصار اس بات پر ہوتا ہے
> کہ وہ
> قوم علم و عمل کے میدان میں کس طرح
> کے طرزِ عمل کا مظاہرہ کرتی ہے،
> اور
> اردو وکیپیڈیا آپ کو وہ موقع
> فراھم کرتا ہے کہ جہاں آپ نا صرف یہ
> کہ علمی
> میدان میں عملی طور پر باآسانی
> اردو کا تشخص اجاگر کرسکتے ہیں
> بلکہ خود
> اپنی شناخت بھی بنا سکتے ہیں۔
>
> 1- ویکیپیڈیا ایک عالمگیر سائٹ ہے
> ، اس پر کی گئی آپ کی تحریر بھی
> عالمگیر ہوگی۔
>
> 2- وکیپیڈیا آپ کو انٹرنیٹ پر
> لامحدود اسپیس مہیا کرتا ہے ، جس
> پر آپ جس
> قدر چاہیں اپنے قلم کی صلاحیت
> استعمال کر سکتے ہیں۔
>
> 3- وکیپیڈیا آپ کو اپنا ذاتی صفحہ
> مہیا کرتا ہے ، جس پر آپ اپنے بارے
> میں
> جو کچھ تحریر کرنا چاہیں اور جس
> قدر کرنا چاہیں کر سکتے ہیں۔
>
> 4- وکیپیڈیا آپ کو قلمی دوست مہیا
> کرتا ہے جو ہر وقت اور ہر مرحلے پر
> آپ
> کے ساتھ ہونگے۔
>
> 5- ویکیپیڈیا آپ کو ہر مشکل پر فوری
> مدد فراھم کرے گا تاکہ آپ اپنی
> تحریر
> بخوبی مکمل کر سکیں۔
>
> 6- آپ کا جو مضمون بھی جامع ہو جاۓ
> گا ویکیپیڈیا اسکو منتخب مقالے کا
> درجہ دے کر صفحۂ اول (ہوم پیج) کی
> زینت بناۓ گا۔
>
> 7- آپ کا نام آپ کے ہر مضمون کے
> تاریخچے میں ہمیشہ کے لیۓ محفوظ ہو
> کر
> تاریخ کی زینت بنے گا۔
>
> اپنی زبان کے ساتھ اپنے تعلق کو
> جوڑنے اور اپنی نئی نسل کو موجودہ
> ترقی
> سے ہم آہنگ کرنے کے لئے ضرورت ہے
> کہ موجودہ دور کے نصاب کے مطابق
> علمی ،
> سائنسی اور تاریخی و معاشیاتی
> مضامین ہماری اپنی زبان میں موجود
> ہوں۔
>
> مضامین کی تعداد 10000 تک پہنچانے کے
> لیۓ دیگر زبانوں کے ویکیپیڈیاؤں
> کے
> ساتھ اردو وکیپیڈیا کے مقابلے کا
> آغاز یکم رمضان المبارک سے شروع ہو
> کر
> عید تک جاری رہے گا۔ اس مقابلے میں
> آپ کی شرکت کے لئے تعلیم، تجربہ
> اور
> عمر وغیرہ کی کوئی شرط نہیں ہے۔
> مقصد صرف اردو کا فروغ اور ہماری
> نئی نسل
> کو اپنے اسلاف کی روایات و اقدار
> سے روشناس کرانا ہے۔
>
> آیۓ ! اس عید پر اردو پڑھنے سمجھنے
> والوں کے لیۓ مل جل کر ایک علمی
> تحفہ تیار کریں۔
>
> 10000 ہزار اردو مقالات کا ایک
> عالمگیر تحفہ!
>
> اللہ ہم سب کا حامی و ناصر ہو۔
>
> والسلام
> منجانب، اردو وکیپیڈیا کے فعال
> کارکن

جی هاں اپ بھی ائیں اس وکی پیڈیا پر کجخ کام کردیں
که جس طرح تحریک پاکستان میں کام کرنے والوں کی اولادیں اس بات پر فخر کرتی هیں که ان کے اباء نے تحریک پاکستان مین حصه لیا تھا
یه وکی بھی اسی طرح کی چیز ہے که آپ کی اولادیں اس بات پر فخر کیا کریں گی که همارے بابوں نے بھی اس پروجکٹ کو بنانے ميےن حصه لیا تھا ـ

اتوار، 24 اگست، 2008

ٹوٹکے

ٹونے ٹوٹکے هر معاشرے میں پائے جاتے هیں
یا کہـ لیں که ممالک کے موسمی حالات ایسے ٹوٹکے پیدا کرتے هیں ـ
پنجاب میں پرانے زمانے میں اکر کسی کو چکر انے لگتے تھے تو ایک ٹوٹکا کیا جاتا تھا که اس کو بیلنے کی '' ٹیرنی '' سے تول کر خام مال سے بنا هوا حلوا کھلایا جائے ـ
ٹیرنی کی ڈیفینیشنز هیں که کپاس بیلنے والا بیلنا جس سے روئی اور بنوله کو علیحدھ کیا جاتا تھا اس کو گمھانے کے لیے جو دستی استعمال هوتی تھی اس کو ٹیرنی کہتے تھے
اس سے برابر تول کر ڈالا گیا دیسی گھی کھنڈ (چینی) سوجی اور دوسری مغزیات سے یه اتنا مرغن بن جاتا تھا که لذت بھی هوتی تھی اور کلوریز بھی ـ
جس کسی کو برے خواب اتے تھا اس کو سرهانے ''ڈوئی '' رکھ کر سونے کا کہاجاتا تھا ـ
دل خراب هونے کو اردو میں کیا کہیں گے؟
متلی انا ؟
لیکن یه پنجابی والےدل کا خراب هونا کا صحیع ترجمعه نہیں بنتا کینکه یه کیفیت متلی سے کچھ کم هوتی هے ـ
فرانس میں دل خراب هو نے والے کو قند (چینی) کی ڈلی چوسنے کا کہتے هیں ـ
اور جاپان میں نمک چاٹنے کا !!ـ
فرانس میں اتنی ٹھنڈ پڑتی هے که سال کے چند هی دن هوتے هیں جب رات کو بناں کچھ اوڑھے سویا جاسکے
اس موسم کی مناسبت سے یه بات صدیوں کا نچوڑ هو گی
اور جاپان میں گرمیوں میں پسینے بہت اتا ہے
جس سے نمک کی کمی هو جاتی هو گی اور اس لوگوں نے نمک چاٹنے کا آئیڈیا پایا هوگا ـ
پاکستان میں دل خراب هو نے پر کیا کرتے هیں ؟؟
گرمیوں میں اگر دل خراب هو تو کالی مرچ چبانے کا کہتے هیں اور اگر سردیوں میں هو تواپنی بغلیں سونگھنے کا کهتے هیں ـ
انیس سو اٹھاسی کی بات ہے که میں جاپان ميں ایک فیکٹری میں کام کرتا تھا
جاپان ائے ابھی چند هفتے هی هوئے تھے
گوجرانواله وحدت کالونی کے ایک ایجینٹ منیر کو پانچ سو ڈالر دے کر اس فیکٹری میں کام لگا تھا
که ایک دن مجھے وه هو جس سے انکھوں کے اگے اندهیرا اجاتا ہے
میں نے اپنے ساتھ کام کرنے والے ستر ساله خاتون اکی با سان کو بتا یا
تو اس خاتون کے لنچ میں میرے اگے دو ابلے هوئے انڈے رکھ دیے ـ
میرو دل میں پہلا خایل تو یه ایا که لو جی یه مائی مجھے مارنا چاهتی ہے
که پاکستان میں انکھوں کے اگے اندهیرا انے کو گرمی هو جانے کی وجه کہتے هیں اور اسے بندے کو انڈھ مچھلی منع کرتے هیں
اور اکی با سان ہے که مجھے ابلے انڈے دے دهی ہے وه بھی '' دو دو '' ـ

لیکن جی لنچ ٹائیم تھا اور سارے ورکر اکٹھے تھے اور جاپانی تھے میں ایک دیسی
انہوں نے مجھے یه دو انڈے کھانے پر مجبور کردیا (ویسے بھی ابلے انڈے مجھے پسند هیں ) ـ
لو جی سالہاسال مجھے انکھوں میں اندھیرو والی شکایت نہیں هوئی
جاپان کہتے هیں که انکھوں کے اگے اندھیرا انا کیلشیم کی کمی هوتی هے اور ناڈھ کیلشیم کی کمی پوری کر دیتا ہے ـ
اس لیے انڈھ کھاؤ
اور پاکستان میں اس بات پر اگر ایک نوجوان کسی نیم حکیم کے پاس چلا جائے تو وه کیا کرے گا ؟؟
وه میں نے اگر لکھا تو فحاشی کے زمرے میں اجائے گا
اس لیے باقی خیر سہی ـ

سوموار، 18 اگست، 2008

جاپان کا چودھ اگست

جاپان میں چودھ اگست کی چھٹیاں تهیں جی ـ
بارھ اگست سے لے کر سترھ کے اتوار کو بھی ملا لیا گيا ـ
میرا بھائی حاجی ننھا جاپان کی ان چھٹیوں کو چودھ آگست کی چھٹیاں کہا کرتا تھا
لیکن جاپان مین ان کو اوبون کی چھٹیاں کہتے هیں
اوبون !ـ جاپان کی ایک رسم یا مذہبی تہوار هوتا ہے
ان دنوں جاپانی لوگ اپنے قبرستانوں میں جاتے هیں اور ایک چراغ کی صورت میں اپن بزرگوں کی ارواح کو ساتھ اپنے گھر لےکر اتے هیں ـ
اور یه دن اپنے بزرگوں کے ساتھ گزارتے هیں ـ
جاپان ميں هر قبرستان کے ساتھ ایک حانقاھ هوتی هے جس کو اوتے را کہتے هیں ـ
جاپانی خانقاھ یا ٹمپل دو طرح ک هوتے هیں
ایک جن کے ساتھ قبرستان هوتا ہے
اس کو او تے را کہتے هیں اور
دوسرا جس کے ساتھ قبرستان نهیں هوتا
اس کو جینجا کهتے هیں ـ
جینجا کی جو لفظی شکل هوتی ہے اس کو اگر پنجابی میں پڑھیں تو اس کا معنی بنتا هے خدا ـ
ابون کی چھٹیوں میں اوتے را ایک چراغ مہیا کرتا ہے جس میں جاپانی یقین کے مطابق ان کے بزرگوں کی ارواح هوتی هیں
اس چراغ کو گھر مين لا کر رکھا جاتا ہے اور اور اس چیز کے یقین کے ساتھ یه چار دن گزارے جاتے هیں که اپنے بزرگ بھی گھر میں هی هیں
رشته دار بھی ملنے اتے هیں
اور رشتے داروں کو ملنے جایا جاتا ہے که اس طرح سارے خادان کے بزرکےن کو سلام هو جاتا هے ـ
ابون کے ختم هونے پر اس چراغ کو واپس اوتے را میں لے جایا جاتا ہے
که ارواح واپس اپنی آرام گاھ پر پهنچ جاتی هیں ـ
کیونکه ان دنوں سارے هی کاروبار بند هوے هیں میں بھی گھر سے باهر نهیں نکلا که گرمی بھی بہت تھی ـ
اور کام کاروبار کا بھی کوئی امکان نہیں تھا ـ
اولمپک کی کوریج بھی دیکھی
مائیکل فلپ کی کارگردگی واقعی بہترین هے
اپنی اداؤں میں سادھ سا یه بندھ اپنے اندر کتنا ٹیلنٹ لیے هوئے هے
میری دعا ہے که بعد میں اس پر دوائی لے کر کار گردگی کا الزام ناں لگ جائے ـ
جوڈو ميں جاپان کو کارگردگی بھی ٹھیک هی تھی مگر جوڈو جو که جاپانی کھیل هے اس مین جاپانیوں سے کچھ اور بھی بہتری کا تقاضا کیا جاسکتا ہے مگر انٹرنیشنل جوڈو کے اصول کچھ بدل چکے هیں
جوڈو کسی حد تک ریسلینگ کی کشتی سی لگنے لگی هے
جس کو که ابھی جاپانی ہضم نہیں کرسکے شائد اس لیے !!ـ

لو جی اپنے سید ناں مشرف مرید بااوصاف استانه عالیه واشنگٹن شریف پیران نے پیر وڈی تے ڈاڈی وائٹ هاؤس والی سرکار
بھی پاکستان کی جان چھوڑنے پر مجبور کرهی دئے گئے
میں صرف مشرف صاحب سےاستعفی دینے پر اتنا هی کہوں گا
بڑی مہربانی جی جرنل صاحب

جمعہ، 15 اگست، 2008

جشن غلامی

جشن آزادی پر هر کوئی لکھ رها ہے اور لوگ بھالے اس دن کو ایک رسم کی طرح منا رہے هیں
لیکن
ایمانداری کی بات تو یه هے که مجھے آزدای کا احساس هی نہیں هوتا
کیا هم واقعی ازاد هیں ؟؟
کسی نے یه بھی لکھا ہے که پاکستانی قوم اپنا باسٹھواں جشن ازادی منا رهی ہے
لیکن مجھے یاد ہے که اکیاسی سے پہلے چودھ اگست کو ایک جشن کی طرح منانے کا رواج نهيں تھا ـ
هم کبھی ازاد هوئے هی نهيں هیں
دوسری جنگ عظیم میں جرمنی اور جاپان کی مہربانی سے برطانیه تھوڑا کمزور هوا تو
تاج برطانیه نے اپنی کالونیوں کو امریکه کے حوالے کردیا تھا ـ
برطانیه نے اپنے مال (کمہاروں کے گھروں میں مال گدھوں کو کہتے هیں ) کو امریکه کی سپرد داری میں دے دیا ہے ـ
لیاقت علی خان کے دورھ امریکه پر استاد دامن نے لکھا تھا
دورھ وی پیندا اے تے امریکه دا پیندا اے
بیگم کی کہیندی اے تے غرارھ کی کہندا اے
لیکن میر قوم کو ازادی کا مغالطه هی لگا رها
اور جب همارے اقاؤن کو اس بات کا یقین هو گيا که اب یه قوم واقعی ازادی کے مغالطے میں گمراھ هو چکی ہے تو انہوں نے همارے کم عقلی کا مذاق اڑانے کے لیے اس وقت کے وائسرائے جرنل ضیاع کو ذریعے همیں جشن ازادی منانے کا '' کملا پن '' سکھا دیا ـ
ذرا اپنے حالات پر غور کریں
کیا یه ازاد قوموں کا وطیرھ ہے که
جو هم کررهے هیں
اسلام کے نام پر بننے والے اس ملک پاکستان میں کیا اسلام ازاد ہے
کیا مسلمان ازادی سے مسجدوں ميں نماز پڑھ سکتے هیں جیسے که مسلمان جاپان میں پڑھ سکتے هیں ـ
کیا اس ملک پاکستان میں پاکستانیوں کو روزگار کے ذرائع میسر هیں ؟؟
کیا همیں تحفظ حاصل ہے ؟؟
کیا همیں تعلیم کے مواقع میسر هیں ؟؟
کیا هم اپنی مرضی کے نمائیندے چن سکتے هیں ؟؟
کیاهمیں اپنے معاشرے کے انتظام میں کوئی کردار حاصل هے؟؟
کیا ہمارے لیڈر اپنے اپ کو هم میں سے سمجھتے هیں ؟؟
کیا هماری مبینه حکومتیں اپنے فیصلے خود کرتی هیں ؟؟
یارو آزادی ہے کیا ؟؟
اور کیا هم آزاد هیں ؟؟
غلام کی خُو میں اتنے پکے هو چکے هیں که غلامی کو هی آزادی کا نام دے دیا ہے ـ
هم ابھی ازاد هوئے هی نهیں هیں
همیں ایک اور تحریک ازادی کی ضرورت ہے
مگر
همیں احساس تو هو که
هماری حثیت کیا ہے
قوموں کی برادری میں

جمعرات، 14 اگست، 2008

خاور شاعر هو گیا

کوئی کج بنیا بیٹھا اے کوئی کچھ بنیا بیٹھااے
ایتھےهر ٹھگنا ویکھو ، عالم چنا بنیا بیٹھا اے

پنڈ دی اچی ممٹی تےاک گرج بیٹھی میں ویکھناں واں
پنڈ تے پاویں اجڑ گیا ، پاسپان بنیا بیٹھا اے

بڑیاں پھمنیاں پاندے نے چابک دستاں وکھاندے نے
اجڑے هوئے کھوھ اتے گالڑ ، پٹواری بنیا بیٹھا اے

دیندار سب لسے هو گئے یا فیر پنڈ اي چھڈ گئے نے
چام چڑکاں هون مسیت دا متولی بنیا بیٹھا اے

غلامی دے اس دور، ظلم دی اس رات نوں میں کی آکھاں
ادارے سارے برباد نے تے هر سیٹ اُتےافسر،الو بنیا بیٹھا اے

جمہوریت اک امید سی ساڈے جہے کمزوراں دی
پر ایتھے یارو هر لیڈر وی فرعون بنیا بیٹھا اے


لولیاں وچ لنگے جیویں انیاں دے وچ کانے راجے
جاپان دے وچ ایویں ای خاور شاعر بنا بیٹھا اے

بدھ، 13 اگست، 2008

پانی رے پانی

کچھ منظر ایسے هی یاد رهے جاتے هیں اور کچھ پرانی تصویر دیکھتے هوئے چونکا دیتے هیں که هم ایسی جگه سے بھی گذرے هیں
هانگ کانگ کے پاس چین کا ایک علاقه ہے مکاؤ جو که پرتگیز کالونی هوا کرتی تھی
مکاؤ میں مجھے اس بات نے متاظر کیا تھا که سمندر میں دو رنگ هیں
چاهے درمیان سے سڑک هی کذر رهی هے مگر پل کے نیچے سے بھی دونوں طرف کا پانی ملا هوا نہیں ہے



یه تصویر دور سے لی تھی مگر یه ٹاور کی فوٹو بناتے هوئے سمندر کا عکس بھی اگیا ہے
دونوں طرف کے پانی کا رنگ واضع طور پر علیحدھ نظر ارها ہے

اب میں سوچ رها هوں که میں نے دھیان دے کر ایک تصویر ایسی جگه سے کیوں ناں بنائی که جہاں سے ان دونوں پانیوں کے درمیان کوئی چیز نہیں تھی لیکن پانی دونوں طرف کا واضع طور پر اختلاف رنگ تھا ـ
زمین کی سیاحت میں ضروری نہیں هوتا که اپ هر بات کو اس وقت هی محسوس کر جائیں بہت سی باتیں کسی بات سے یاد اجاتی هیں اور کچھ باتیں اپنی اس وقت غور ناں کی گئی باتوں کو بھی یاد دلا دیتی هیں
میں نے جب یه تصاویر بنائی تھیں مجھے اس وقت کی ایک بات بہت اچھی طرح یاد ہے که
اس وقت اس جگه گرمی بہت پڑ رهی تهی ـ

هو سکتا ہے که اپ کو کبھی اتفاق هو مکاؤ سے گذرنے کا ـ
تو جی جناب یه دیکھیں
اس ٹاور پر چڑھ کر دیکھیں ایک اپنا هی سواد ہے جی ''ٹمنے '' پر چڑھنے کا ـ
چین کے دیہاتی ماحول والا یه شہر مجھے اپنے گاؤں جیسا هی لگا تھا جی ـ

اولمپک کی باتیں

جاپان میں اج کل اولمپک کی دهوم مچی هے جی ـ
هر بندھ ٹیلی وژن پر اولمپک کی کوریج دیکھ رها ہے ـ
جوڈو سے دلچسپی رکھنے والے لوگ تھامورا ریوکو کا نام تو جانتے هی هوں کے ـ
بارسلونا اولمپک میں جوڈو میں گولڈ میڈل لینے والی یه خاتون اب ایک بچے کی ماں هیں ـ
جاپان میں هر بندے کا نام اس کے نام اور خاندانی نام کا مجموعه هوتا ہے
تھامورا اور ریوکو سے مل کا تھامورا ریوکو بنتا ہے اس میں تھامورا فیملی نیم هے ـ
شادی کے بعد عورت اپنے خاوند کے فیملی نام سے جانی جاتی هے
اس لیے تھامورا بھی شادی کے بعد
تھانی ریوکو هو گئی هیں ـ
هو سکتا ہے که اپ نے تھانی ریوکو کا نام سنا هو
که اس خاتون نے اس نام سے بھی ایتھنز اولمپک میں گولڈ میڈل لیا تھا
جاپانی لوگ ان کو یاوارا چان کہتے هیں
یاوارا چان نام کا ایک مانگا کیریکٹر هوا کرتا تھا
یه کریکٹر فی میل تھا جوڈو میں انتہائی چابکدست کردار . اس لیے تھامورا کا نام بھی یاوارا چان پڑ گیا ـ
تھامورا کے گھر پہلے بچے کی پیدائیش پر جب صحافیوں نے ان کے تاثرات پوچھے تو
یاوارا چان کا کہنا تھا

تھامورا کے نام سے ایک گولڈ میڈل اور تھانی کے نام سے ایک گولڈ میڈل لیا اب خواہش ہے که ماما بن کر ایک گولڈ میڈل لوں
همارے بھی حمایتیں یاواراچان کے ساتھ تهیں مگر اس سال یاوار چاں گولڈ میڈل نہیں لي سکیں
مگر
دنیا کی تیسری مضبوط جوڈو خاتون اب بھی هیں ـ
سوله سترھ سال پہلے کی بات ہے میں بھی جاپان میں هی هوا کرتا تھا اور سپورٹس کے نام پر کراٹے کی ورزشیں کیا کرتا تھا
همارے ساتھ بھی کئی جوان لڑکیاں کراٹے سیکھتی تھیں اور ان میں بلیک بیلٹ بھی تهیں
فلموں کی بات چھوڑیں یه ایک حقیقت ہے که خاتون کتنی بھی ورزش کرلے یا شارپ هو جائے اس کے پینتروں میں ایک نسوانیت پائی جاتی ہے ـ
لیکن یاوارا چاں کے پیتروں میں ایک مردانه پن پایاجاتا تھا
مجھے ان کو ٹی وی پر دیکھے هوئے مقابلے یاد هیں
که جب یاوارا چان مقابل پر جھپٹتی تهیں تو ایسا لگتا تھا که باز نے چڑیا پر حمله کردیا هو ـ
لیکن جاپانی زبان کا ایک محاورھ ہے که
ہر بلندی پر سے بھی کچھ بلندیاں هوتی هیں
تو جی ایشن گیمز میں میں نے دیکھا که جب نارتھ کوریا که ایک کھلاڑی نے یاوارا چاں کو دھوبی پٹکا مار کر گرایا تو یاوار چان حیران هی رھ گئیں تھیں ـ
نارتھ کوریا ایک ایسا ملک هے که جو اہنی دیوار کے پيچھے هے
پرانے سویت یونین کی طرح
اس لیے اس ملک کے اندر کتنی صلاحیتوں کا گلا گونٹھا جارها ہے یا کتنے نئے تارے بن رہے هیں ان کی کسی کو خبر نهيں هوتی ـ
بہرحال جی
تھامورا ریویکو سان اب تک اولمپک میں پانچ میڈل لے چکی هیں جن میں سے دو گولڈ میڈل هیں ـ
اس کے بعد کیتھا جیما کا ذکر بہت چل رها ہے جی ہر طرف انہوں نے ایتھنز مین تیراکی میں گولڈ میڈل لیا تھا ور اب پیکینگ اولمپک میں بھی گولڈ میڈل حاصل کیا هے ـ
پچھلے دنوں سویمنگ سوٹ کے مسلے میں بھی ان کا نام اتا رها که کیتھا جیماسان سپیڈو نام کے میکر کے سوٹ کو ترجیع دے رہے تھے مگر اولمپک کمیٹی اس بات کو نہیں مان رهی تھی کیونکه سپیڈو نام کا میکر اولمپک کمیٹی کا منظور کردھ نہیں تھا
کیتھا جیماسان کے علاوه بھی کتنے هی کھلاڑیوں کے سپـیڈو کو ترجیع دینے پر اب سوینمگ سوٹ کی شرائط کو بدل کر دیا گيا ہے اور
اب کھلاڑی اپني مرضی کے سوٹ بہن سکتے هیں ـ
ان کیتھا جیما سان کو چائینی لوگوں نے
شاھ مینڈک
کا خطاب دیا ہے
بادشاھ ڈڈو
جاپانی میں کھایرو او کہیں گے
ایک تیراک کے لیے ایسا خطاب ؟
اپنااپنا قومی مزاج هوتا ہے ناں جی
ابھی اولمپک جاری هیں
مردانه جوڈو میں بھی شیبا سان اب تک گولڈ میڈل حاصل کرچکے هیں
اس کے علاوھ بھی جاپانی تو کتنے هی گولڈ میڈل حاصل کر لیں کے اور
هم پاکستانی ؟؟
ہم بڑی نازک مزاج قوم هیں اگر کسی نے اس بات کی طرف اشارھ بھی کیا که پاکستانی قوم کا اولمپک میں معیار کیسا رها تو
یه ناں هو که کچھ لوگ مجھے اوکشن میں کھڑا کر کے دھمکیاں دینے لگیں که تم پاکستان کو برا کهتے هو ـ

اتوار، 10 اگست، 2008

سلام بازار

سلام بازار!ـ
جی یہاں جاپان میں پاکستان ایمبیسی کے زیر اهتمام ایک میله سا تھا
یا یه کہـ لیں که مل بیٹھنے کا ایک بہانه سا تھا !ـ
سلام ،آداب، مرحبا، ست سری اکال ، کونی چیحا، هیلو یاپھر نمستے کہـ لیں
بس جی اداب کے طریقے هوتے هیں ہر مذهب اور معاشرے کے لیکن مقصد سب کا ملتا جلتا ہے که ملنے والے دوسرے پر سلامتی کا پیغام ـ
یہاں ایک باریکی کی بات ہے که یه
سلام بازار تھا
ناں که
اسلام بازار!!!!ـ
اسلام کو بازار لگا کر پیچنا ایک اور بات ہے اور سلام بازار لگا کر اس بات کو اجاگر کرنا که کاروباری سب کی سلامتی مانگتے هیں ایک اوربات ہے هے ـ
اس کو جاپانی میں
کونی چی ھا بزار کہـ لیں یا
پھر انگریزی میں
ہیلو بزار ـ
اردو نیٹ پوڈ کاسٹ
والے زبیر صاحب کی میل سے مجھے معلوم هوا که طوکیو کے مشہور پاک وینو پارک میں سلام بازار کا اهتمام کیا هے پاکستان ایمبیسی نے
یه پارک میرا جانا پہچانا هے
اس لیے میں کسی سے پوچھے بغیر هی اج صبح یہاں پہنچ گیا
ویسے تو كافی بڑا پارک ہے
یه ہے جی اس بازار کو سامنے سے تصویر

اس تصویر میں
سامنے والے تنبو کے پیچھے درختوں کی قطار میں جو چخت نظر ارهی هے وه ہے
طوکیو کا نیشنل میوزیم ـ
موسیقی کا پروگرام تھا

جس میں یه فنکار لوگ
پاکستان سے تشریف لائے تھے میرے زیادھ هی سویرے پہنچ جانے کی وجه سے میں ان کی فارغ بیٹھے هوؤں کی ایک تصویر بنا لی

یه تھا جی پاکستان ایمبیسی کا
سٹال
جس میں فروخت کے لیے رکھے هوئے تھے جی
یه والے
آلو چھولے اور کباب ـ
یه ایک ریسٹورینٹ والوںکا سٹال تھا
جس میں خاتون
سیلز گرل بڑی عجیب سی لگ رهی تھی کیونکه ابھی جاپان مین پاکستانی خواتین کام کرتی نظر نہیں آتییں
اور اس تصویر میں ایک خاتون جاپانی لوگوں کو
مہندی لگا رهی هے
جاپانی معاشرےمں مہندی ایک انوکھی چیز ہے
مہندی سے جاپانی پچخلی دو دهائیوں هی میں واقف هوئے هیں ـ
هو سکتا ہے که تاریخ کے کسی اور دور میں بھی جاپانی اس چیز سے واقف هوں مگر هم نے جب جاپان میں قدم رکھا تو انہوں کو مہندی سے ناواقف هی پایاتھا ـ
یه ایک
تصویر که
میں نے بچپن میں اپنے نصاب میں کہیں دیکھی تھی اب یاد نہیں که چوتھی جماعت میں تھی غالباً؟
بازار کے داخلے کے فوراً بائی طرف طوکیو کا چڑیا گھر ہے
اس تصویر میں
میں نے پاکستانی جھنڈے کے ساتھ چڑیا گھر کو اس لیے دیکھیا ہے که جب هم جاپان مین ائے تھے تو اور سٹے هوا کرتے تھے اس وقت کبھی سوچا بھی نهیں تھا که ہم اس لائق هو جائیں گے که یہاں کوئی پروگرام کر لیں
نیچے والی تصاویر میں ڈانسر اپنے فن کا مظاهرھ کر هو هیں
پس منظر میں
فوارھ چل رها ہے


یہاں شرو بھی ایا هواتھا
شیرو
کے متعلق میں اپنی ایک
یہاں پر
تفصیل سے ذکر کرچکا هوں

یه صاحب هیں جی کیمرے کے ساتھ ان کا نام ہے
شیخ فیاض حسین
یه صاحب جب بھی تصویر بناتے تھے اپنا هیٹ کسی کو پکڑوادیتے تھے
غالباً عام طور پر ان کے ساتھ ہلپر هوتا ہے لیکن اس دن شیخ صاحب اکیلے تھے
دو تین دفعه میں نے بھی ان کا هیٹ سنبھامنے کا شرف حاصل کیا ہے

یه جی مفت مشروبات کی سبیل لگائی هوئی تھی شہزاد علی بہلم صاحب نے اور اس پر کھڑے تھے
طلعت بیگ اور بٹ صاحب
لیکن یه بٹ صاحب اصل میں خواجه صاحب تھے اور بٹ صاحب نہیں کهلوانا جاهتے تھے
طلعت بیگ صاحب پاکستان ایسوسی ایشن (منتخبه)کے نائب صدر هیں ـ
ان کو گله تھا که ایمبیسی والے کچھ لوگوں کو کچھ لوگوں پر ترجیع دیتے هیں
جو که نہیں هونا چاهیے
ایمبیسی والوں کو سب هی لوگوں کو ایک انکھ سے دیکھنا چاهیے
اور جی هیں
زبیر بھائی صاحب
ان کا تعلق ہے صحافت سے
جاپان سے یه انٹر نیٹ اون لائین پوڈکاسٹ نیوز نکالتے هیں
زبیر بھائی اردو کو نستلیق میں هی لکھنا پسند کرتے هیں اس لیے ان کی سائٹ ایمجیز کی شکل هوں هوتی ہے
ان کی سائٹ دیکھنے کے لیےیہاں کلک کریں
یه ایک ویڈیو جی ذرا ہلا گلا کا میرے کیمرے سے کچھ ایسا هی بنتا ہے

امید ہے که اپ پسند کریں گے

جمعہ، 8 اگست، 2008

سید ناں مشرف

لو جی اپنے سید ناں مشرف صاحب پیراں نے پیر صاحبزادھ استانه عالیه لال حویلی دەلی والی سرکار کے مواخذے کی بھی بات چل هی نکلی جی ـ
ان پیچ منٹ
میرا تو خیال تھا که سید صاحب خود هی اپنی '' امت '' پر ترس کھا کر کہیں منه کالا کرجائیں کے مگر یه تو جی منه کالا کروا کر هی نکلنے کی نیت باندھے بیٹھے هیں ـ
اصل میں '' امت '' بھی تو مانتی هی نہیں ہے
کهلواتے مسلمان هیں اور سیدوں کی بات نہیں مانتے
شریعت هی لانے کی ضد کیے بیٹھے هیں ـ
اب اگر سید صاحب کہــ رہے هیں که روشن خیالی نام کی چیز پر ایمان لا کر دل ''لاهوری ''پشاوری'' کر لو تو بھی کفران نعمت هی کیے جاتے هیں ـ
حالانکه سید صاحب نے خانه کعبه کی چھت پر چڑھ کر الله اکبر کا نعرھ بھی لگایا هوا ہے
شراب کے مخالف یه طالبان اور مولوی ان کو کیا معلوم که شراب پی کر سلوک کی کن منازل کو طے کرتے هیں
اپنے سید صاحب ـ
اساں شراباں پیتیاں
تے مولا نال گلاں کیتیاں ـ
سرور کی حالت میں اس امت کا سوچ سوچ کر غم سے سید صاحب کا پیٹ بڑا هوتا جاتا ہے ان عقل کے اندھوں کو نظر هی نہیں اتی
ان کی اتنی بڑی کمانڈو توند !ـ
کتوں کو نحث کهنے والے یه مولوی کیا جانیں که سید صاحب کے کتوں کی کیا شان ہے
بڑے بڑے افسر لوگ ان کتوں سے منه چٹوانے کی کوشش میں '' پھاوے'' هوئے جاتے هیں ـ
بڑا گله هے جی سید صاحب کو ان مولویوں سے ان کی ایک نہیں مانتے
اور تو اور استانیه عالیه واشنگٹن شریف وائٹ هاؤس والی سرکار وڈے تے ڈاڈے پیر بش صاحب کو بھی کچھ نہیں سمجھتے ـ
کون کون سو جتن نهیں کیے جی وڈی تے ڈاڈی سرکار نے ان کو سمجھانے کے مگر پچھلے آٹھ سالوں سے پہاڑوں میں چھپ چھپ کر وڈی تے ڈاڈی سرکار کے جہازوں کو ''ٹیماں '' مارتے هیں ـ

بہرحال اب تو جی لگتا ہے که سید صاحب کو جانا هی پڑے گا

اور هو سکتا ہے که جاتے جاتے کچھ لتر پولا بھی هو جائے
مجھے بڑی خوشی هو گي جی اگر ان صاحب پر لال مسیت کا مقدمه چلے گم کردیے لوگوں کے مقمات چلیں اور ان صاحب کو بھی پته چلے که مجبوری کیا هوتی هے

فوج کے حکومت هی سنبھال لینے کے تو میں بہت هی خلاف هوں مگر میری حمایت اپنی فوج کے ساتھ هے
اور مجھے اس پاک فوج پر یقین ہے که ایک دن یه فوج هی ڈکٹیٹر جرنلوں کا راسته روکے گی
ائی ایس ائی کے خلاف هونے والے پروپیگینڈا کی میں مذمت کرتا هوں
ائی ایس ائی کے خلاف کچھ بات نہیں هونی چاهے
اور ائی ایس ائی کو ایسے هی کام کرنے دیا جانا چاهیے
ائی ایس ائی کے کاموں روڑے ناں اٹکائیں
لکھنے والے بھی احتیاط کریں
ائی ایس ائی صرف اور صرف پاکستان کی بقا کے لیے هی کام کررهي هے
طریقه کار سے اختلاف بھی ناں کریں که اپنے حالات کی مجبویوں میں ائی ایس ائی جو کچھ کر رهی هے غنیمت هے ـ

اتوار، 3 اگست، 2008

غریبی کا خوف

بی بی سی پر ایک خبر نما مضمون پڑھ کر دل بڑا رنجیدھ هو ا ـ
کیونکه یه خبر میرے علاقے کی ہے
اور کردار بھی اپنے آپنے سے لگتے هیں ـ
انسانی نفسیات ہے که اس کو اپنے نزدیک کی خبر کسی بھی اور خبر سے زادھ ایٹریکٹ کرتی ہے
چک نظام ہمارے گاؤں سے صرف دو هی کلومیٹر کے فاصلے پر ہے
اس گاؤں میں پرائمری تک تو سکول ہے اس کے بعد اس گاؤں کے طالب علموں کو ہمارے گاؤں والے هائی سکول میں آنا پڑتا ہے ـ
یورپ جانے کی کوشش میں مجروح هو جانے والے اس لڑکے کی عمر ابھی صرف بیس سال ہے
اور اگلے مہینےیعنی ستمبر دو هزار آٹھ کی سترھ کو مجھے اپنے گاؤں سے نکلے بیس سال هو جائیں گے
اس لیے اس کو جاننے کا دعوه تومیں نہیں کروں گا
لیکن اس گاؤں کےلوگوں کا ہمارے گاؤں میں اتنا اناجانا ہے که جب تک میں پاکستان میں تھا
اس گاؤں چک نظام کے سارے هی کاروباری لوگ مجھے جانتے تھے ـ
دل رنجیدھ هونے کا سبب یه هے که کسی بھی مجبور پر گذرنے والی ظلم کی واردات مجھے اپنے پر گزری لگتی ہے ـ
اپنی کم مائیگی اور مجبوری کا احساس هوتا ہے که ہم پاکستانیوں کو آپنی غریبی سے نپٹنے کے لیے کیا کیا جتن کرنے پڑتے هیں ـ
میں آپنے هی ملک میں آپنے هی لوگوں میں آپنی هی زمین پر بھی رہنے کے قابل نهیں هوں کیا ؟؟
کسی اور کا کیا جواب هو گا نامعلوم مگر میں کہوں کا
هاں
پاکستان میں اس طرح کے حالات پیدا کر دیے گئے هیں که میں خود سے هی اس ملک سے فرار هونے کی کوششوں میں لگا هوا هوں ـ
انگریزی میں مس فٹ کہتے هیں اور اردو میں فضول اور
پنجابی میں کہیں کے
گھونسلے سے گرا هوا بچہ ـ
اور اگر میں معاشرے کو الزام دوں کو کہوں گا که ہم
پاکستانی معاشرے کے دھتکارے هوئے لوگ هیں ـ
اگر نہیں تو میں اس معاشرے کے بھاگنے کے لیے اتنا تردد کیوں کرتاهوں؟؟ ـ
غربت کے خوف سے !ـ
جی هاں غربت کے خوف سے
لیکن قبرستان کے نزدیک سے گزرنے والے خوف زدھ بچے کی طرح جس کا پیشاب خطا هونے کے قریب هو مگر اپنے دل کی تسلی کے لیے للکارے مارے که
مجھے ڈر نہیں لگ رها ـ
آپنی غریبی کے خوف سے میں لوگ جب باهر جانے کی کوشش کرتے هیں تو کتنی منتیں مانتے هیں
تعویز کرواتے هیں
پیروں فقیروں کے پاس جاتے هیں
ایجنٹوں کے '' ترلے '' اور منتیں کرتے هیں ـ
اگر پیدل یورپ کی سرحدیں هوں تو قدم قدم پر رب کو یاد کرتے هیں اور دعا یه هوتی هے که
پھر اس جہنم میں واپس نه چلے جائیں جس سے نکل کر آئے هیں ـ
ترکی اور یونان کی سرحدوں پر ہماری لاشیں اٹھانے والا بھی کوئی نهیں هوتا ـ
کنٹینروں میں دم گھٹ کر مرنے والے کسی کھاتے میں هی نہیں جاتے ـ
یه سب لوگ اپنی اپنی ماؤں کے
خاور هوتے هیں ـ
ایک احساس کا نام ہے که یه ساری گولیاں جو ترکی کی سرحد پر لگتی هیں مجھے لگتی هیں
اور مشرقی یورپ کے سرد صحراؤں میں بھی میں هی مرتا هوں ـ
اور اگر جاپان جیسے کسی ملک میں جهاں که ائیرپورٹ کے راستے آتے هیں داخلے کی کوشش میں
هم کیا کیا جتن کرتا هوں ؟؟
ڈی پورٹ هونے کے خوف سے مراجاتا هوں ـ
اور اگر یورپ یا جاپان میں انٹر هو بھی جاؤں تو پھر میری زندگی خوف زدھ چوهے که طرح هوتی هے ـ
کونے کھدورں میں چھپ چھپ کر کان کھڑے کرکے چوهے که انکھوں کی پتلیوں هی کی طرح میری انکھوں کی پتلیاں بھی چاروں طرف گھوم رهی هوتی هیں ـ
که کہیں پولیس والے نه دیکھ لیں ـ
پولیس جو که ان غیر پاکستانی معاشروں میں ایک دوست اور مددگار هوتی هے مجھ پاک لوگوں کو یه دشمن نظر اتی ہے ـ
کیونکه مجھے آپنی غریبی کا خوف هوتا ہے ـ
پھر ہم کیا کیا پاپڑ بیل کر ان ملکوں میں رهنے کے اجازت نامے لیتا هوں ـ
کہیں بیمار بن کر اور کہیں اور کهیں سیاسی مظلوم بن کر
ہر جگه میں بھکاری کی طرح بھیک مانکتے نظر اتا هوں ـ
جاپان میں جہاں مجھے ویزے کے لیے شادی کرنی پڑتی ہے
میں ایسی ایسی عورتوں سے شادی رچا لیتا هوں که جو میری ماں کی عمر کی بھی هو سکتی هے یاپھر ذہنی مریض جسمانی معذور بھی هو سکتي ہے اور ریٹائیر جسم فروش
کچھ بچوں کی ماں هو یا خصموں والی
کوئی بات نہیں جی
ویزھ ملنا چاهیے
که پاکستان والی غریبی سے جان بچ جائے ـ
ساری قباهتوں کے بعد جب مجھے ویزھ مل جاتا ہے تو پھر میرے اطوار دیکھنے والے هوتے هیں ـ
مجھے ڈر نہیں لگ رهاہے
کو میں اس طرح بیان کرنے لگتا هوں که جی میں تو خاندانی امیر تھا
اپنی زمینیں تھیں مکان تھے
اور گر کوئی مجھے سے پوچھ لے که تم کو کسی محکمے نے اس ملک یورپ یا جاپان میں انے کا دعوت نامه بھیجا تھا تو میں بجائے شرمندھ هونے کے اس بندے کے خلاف هو جاتا هوں ـ
کینکه یه بندھ میرے اندر کے خوف کی پہچان رکھتا ہے اور ایسے بندے تو مجھے اچھے هی نہیں لگتے ـ
کہیں کوئی چوها شراب کے ڈرم میں گر گیا
جیسے تیسے باهر نکلا
تو نشه هو چکا تھا

اکڑ کرکھڑا هو گیا
اور لگا للکارے مارنے
کهاں هیں بلیاں
نکالوباهر اج میں ان سب کو کچا هی کھا جاؤں گا

جب مجھے ویزھ مل جائے تو میرا بھی یہی حال هوتا ہے
اور جاپان جیسا ملک هو جہان پیسا بھی بہت ہے اور جاپانی لوگ بھی منسکرالمزاج تو مجھے مسخریاں سوجھنےلگتی هیں ـ
ان ساری باتوں کا مطلب یه نهیں که خاور کو اپنی اوقات بھول گئی هوتی هے
اوقات کی یاد هی تو یه سارے ڈرامے کرواتی ہے که
میں اپنی اوقات بھولنا چاهتا هوں
میرا مفلس ماضی جان نهیں چھوڑتا
اور خوف اتا ہے که وه ماضی پھر ناں آجائے ـ
یاروں میں کی کراں ؟؟
میں وه گدها هوں جو نه گھر کا ناں گھاٹ کا
میں وه کوا هو جو هنس کی چال چلنے میں اپنی بھی بھول چکا هوں ـ
یارو کوئی بتائے که میں کیا کروں که مجھے یورپ کی سرحدوں پر ناں مرنا پڑے
مجھے ویزوں کے لیے اپنی اناء کا خون نه کرنا پڑے ؟؟
مجھے اپنی جائیداد کی تفصیل بتا بتا کر
 اپنے رشته داروں کے سیاسی قد بتا بتا کر
 اپنی غریبی کے خوف کو ناں چھپانا پڑے ؟؟