منگل، 30 مئی، 2006

پيرس كا صحافتى ماحول

ميں ذاتى طور پر ان صاحب كو نەيں جانتا اور مجهے نهيں پته كه يه صاحب كتنے برے هيں ـ مجهے يه ايمج اى ميل سے وصول هوا هے
چوهدرى ممتاز پكهووال
ميں ان صاحب كى شكل سے بهى واقف نهيں ـ اصل ميں يەاں فرانس ميں ٹيكس چور اور مزدور دو مختلف دنياؤں ميں رهتے هيں ـ
يه صاحب اوّل الذكر قبيلے سے لگتے هيں ـ

ہفتہ، 27 مئی، 2006

ايكـ مغالطه

كل كو اللّه نه كرے كه يەودى مسجد كو شەيد كر كے هميں ڈوم آف راكـ كى تصوير ديكها ديں گے كه ديكهو جس كو تم مسجد اقصى سمجهتے تهے وه يه هے ـ
ميڈيا پر بنى اسرائيل كا قبضه هے ـ
بەت سے لوگ اس تصوير كو مسجد اقصى سمجهتے هيں ـ مگر يه هے ڈوم اف راكـ
يا ەيكل سليمانى ـ
ڈوم آف راكـ
بەت سے لوگ اس تصوير كو مسجد اقصى سمجهتے هيں ـ مگر يه هے ڈوم اف راكـ
يا ەيكل سليمانى ـ

مسجد اقصىمسجد اقصى كے صحن سے لى گئى مسجد اقصى كى ايكـ فوٹو ـ

مسجد اقصىمسجد اقصى كى سامنے سے لى گئى ايكـ تصوير

مسجد اقصى
اصلى مسجد اقصى كا گنبدنظر آرها هے اور جەاں لوگ اكهٹے هوئے هيں يه ديوار گريه ـ

جمعرات، 25 مئی، 2006

آيے اردو كى تدوين كريں

وكى پيڈيا كے لئيےجاپان سے جناب ڈاكٹر افراز صاحب سائنسىمضامين لكهتے هيں ـ
مگر انكے استعمال كئے الفاظ مشكل هوتے هيں كيونكه افراز صاحب انگريزى كى نسبت فارسى اور عربى الفاظ كو ترجيح ديتے هيں ـ اور اگر كوئى ان الفاظ كے مشكل هونے كا لكهےتو ڈاكٹر صاحب كے اس لفظ كي حمايت ميں دلائل بهى مدلّل هوتے هيں ـ ـ
ميں نے سوچا كه اس بات كو بلاگ پر ركهـ ديتے هيں كه شائد كسى اور كے ذەن ميں كوئى اور ائيڈيا آ جائے ـ

مثلا ميں نے لكها ـ

اس حقيقت سے تو سب هى واقف هيں كه اردو ذبان مختلف ذبانوں كا مركب هے ـ
اور اس كى تركيب ميں اب بهى كسى بهى ذبان كے الفاظ استعمال كئے جاسكتے هيں ـ
اگر اگر اپ اس بات پر اصرار کرتے ہیں کہ لفظ جِس زبان سے آیا ہو اُردو میں بھی اسکا تلفظ اور استعمال اسی زبان کے مطابق ہونا چاہیئں تو آپ كا مطالبه ايكـ ناجائز مطالبہ ہے۔
عربی فارسی اور سنسکرت کے علاوہ بھی اُردو نے کئی زبانوں سے خوشہ چینی کی ہے لیکن ظاہر ہے کہ اُردو میں آ کر لفظوں کی شکل خاصی بدل گئی ہے۔ جیسے انگریزی کا سٹیمپ پیپر اُردو میں اشٹام پیپر اور بعد میں صرف اشٹام‘ رہ گیا۔ تُرکی کا چاغ اُردو میں آ کر چاق (كمەار كى برتن بنانے كى مشين) ہو گیا اور پُرتگالی زبان کا بالڈی اُردو میں آ کر بالٹی بن گیا۔
جِن لوگوں کا بچپن پنجاب میں گزرا ہے انھوں نے لفظ ’بکرا عید‘ ہزاروں مرتبہ سُنا اور بولا ہو گا۔ بچپن میں اسکی یہی توضیح ذہن میں آتی تھی کہ اس روز بکرا ذبح کیا جاتا ہے اس لئے یہ بکرا عید ہے۔ کچھ بڑے ہوئے تو اس اِسطرح کے جُملے پڑھنے سننے کو ملے۔ میاں کبھی عید بکرید بکرید پر ہی مِل لیا کروـ وقت كے ساتهـ جب الفاظ كو لكهنے پڑهنے كے قابل هوئے تو پتہ چلا کہ یہ تو دراصل بقرعید ہے اور اسکا ’ بکرے سے نہیں بقر (گائے) سے تعلق ہے۔
ميرے خيال ميں توباہر کے لفظوں نے اُردو میں داخل ہونے کے بعد جو شکل اختیار کر لی ہے اب اسی کو معیاری تسلیم کر لینا چاہیئے۔ منبع و ماخذ تک پہنچ کر اُن کے قدیم تلفظ کا کھوج لگانا ایک عِلمی مشغلہ تو ہو سکتا ہے لیکن روزمرّہ استعمال میں اصل اور پرانے تلفظ کو مُسلط کرنے کی کوشش اُردو کی کوئی خدمت نہیں ہو گی بلکہ اسکی راہِ ترقی میں روڑے اٹکانے والی بات ہوگی۔

ڈاكٹر صاحب نے لكها ـ

خاور صاحب آپ سے کوئی اختلاف نہیں کہ جو الفاظ مختلف زبانوں سے اردو میں آکر اردوذدہ ہوچکے ہیں انکو ایسے ہی استعمال کرتے رہنا مناسب ہے بجاۓ اسکے کہ انکی جگہ مشکل اور ثقیل عربی یا فارسی کی اصلاحات کی جائیں ۔ مگر کیا کہیۓ کہ مصیبت تو ان سائنسی اور طرزیاتی (ٹیکنالوجیکل) الفاظوں کی ہے جو کہ ترقی یافتہ زبانوں مثلا انگریزی ، جاپانی کے سوا کسی زبان میں ملتے ہی نہیں ---- آخر کیا قباحت ہے کہ انکے لیۓ بھی کوئی نیا اردو کا لفظ نہ بنایا جاۓ ؟ کیا کسی مشکل سائنسی لفظ کی جگہ کوئی اردو کا لفظ بنایا جاۓ گا تو وہ لوگوں کیلیۓ آسانی نہیں ہوگی ؟ بہ نسبت اسکے کہ اسکو انگریزی میں لکھا جاۓ ؟ ایک مثال دیتا ہوں ---- پولیمریز چین ری ایکشن ---- جب یہ لفظ عربی فارسی اور اردو کسی بھی زبان میں موجود ہی نہیں اور اسکو لکھنا بھی ضروری ہے تو کیا اسکی جگہ ---- کثیر خامری زنجیری تعامل ---- نہیں لکھا جاسکتا ؟؟ جب ایک نیا لفظ لانا ہی ہے تو کیا وجہ ہے کہ اسے لوگوں کو انگریزی ہی میں رٹایا جاۓ ؟؟ میرے خیال سے تو خواہ کسی کو پتا ہو کہ نہ ہو کہ یہ کیا چیز ہے لیکن اسکے باوجود اسکے لیۓ ، پولیمریز چین ری ایکشن ، کی نسبت ، کثیر خامری زنجیری تعامل کا لفظ آسان ہوگا ـ

حيدر نے لكها ـ

میں نے محسوس کیا ہے کہ ہمارے چند دوست وکیپیڈیا پر عملی طور پر قابل استعمال تراجم کرنے کے بجائے ترجمہ سازی کر رہے ہیں جو کسی بھی ایسے شخص کیلے عملی طور پر قابل استعمال نہیں جو صرف اردو لکھنا پڑھنا جانتا ہے۔ براہ کرم رائج العام انگریزی اصطلاحات کو زبردستی اردو میں تبدیل کرنے کی کوشش نہ کی جائے۔ وہ غلطی نہ دہرائی جائے جو ہمیشہ سے ہمارے نام نہاد اردوداں کرتے آئے ہیں۔، اور یہ غلطی ہے قدامت پسندی۔ ذرا اس پر غور فرمائیں اور مجھے اپنے خیالات سے آگاہ کریں۔
دوسری بات یہ کہ صرف ان مضامیں کو شامل کیا جائے جو جامع ہوں۔ ادھورے مضامین کسی بھی سنجیدہ علمی اور عملی ضرورت کو پورا نہیں کرتے۔
ایک گزارش یہ ہے کہ اسلامی تاریخی شخصیات (انبیا، آئمہ، اولیا وغیرہ) پر مضامین کے عنوانات سابقوں (جناب، حضرت وغیرہ) اور لاحقوں (درود، سلام وغیرہ) کے بغیر لکھیں۔ ورنہ وکیپیڈیا کا سرچ انجن شاید ہی ان مضامین کو اپنے نتائج میں شامل کرے۔

ڈاكٹر صاحب نے لكها ـ

آپکے اٹھائے ہوۓ نکات
- میں نے محسوس کیا ہے کہ ہمارے چند دوست وکیپیڈیا پر عملی طور پر قابل استعمال تراجم کرنے کے بجائے 1 ترجمہ سازی کر رہے ہیں
▪ کم از کم میں اپنی طرف سے آپکو یقین دلا سکتا ہوں کہ میں نے کوئی ترجمہ اپنی طرف سے نہیں گھڑا بلکہ صرف وہ ہی سائنسی الفاظ استعمال کیۓ ہیں جو کہ عربی اور فارسی کی سائنسی لغات میں دستیاب ہیں ( اردو میں تو ابھی تک کوئی سائنسی لغت ہے ہی نہیں)
▪ جہاں کوئی مشکل عربی یا فارسی کا لفظ مجبورا لکھنا پڑ ہی جاتا ہے تو اسکی جگہ عام الفاظ میں وضاحت لکھ دی جاتی ہے ( یہ بھی ذہن نشین کرلیجیۓ کہ اس عام اور سادہ وضاحت کے باوجود بھی ایسا ہو سکتا ہے کہ وہ مضمون کچھ افراد کی سمجھ میں نہ آۓ کیونکہ بعض سائنسی مضامین سمجھنا مشکل ہی ہوتا ہے چاہے انکو کتنا ہی آسان زبان میں لکھ دیا جاۓ دوسرے یہ کہ اگر ہم کسی اہم سائنسی مضمون کو انتہائی آسان اور بچوں کی زبان میں لکھیں گے تو اسکی اصل علمی اہمیت صفر ہوجاۓ گی لہذا کچھ مضامین ہو سکتا ہے کہ مشکل ہوں لیکن اسکو سمجھنا اس شخص کی ذمہ داری ہے جو کہ اس میں دلچسپی رکھتا ہو - ویکیپیڈیا صرف عام افراد کیلیۓ ہی نہیں ہے اسکو سائنسدانوں اور عالموں کیلیۓ بھی اتنا ہی مفید ثابت ہونا ہے جتنا عام آدمی کیلیۓ
- وہ غلطی نہ دہرائی جائے جو ہمیشہ سے ہمارے نام نہاد اردوداں کرتے آئے ہیں۔2
▪ یہ ایک پرانا جملہ ہے جو ہم بچپن سے سنتے چلے آرہے ہیں ، یادآوری کرلیجیے کہ حقیقت اور انسانی نفسیات ، کتابی جملوں سے ایک قطعی الگ چیز ہے۔
- دوسری بات یہ کہ صرف ان مضامیں کو شامل کیا جائے جو جامع ہوں۔ ادھورے مضامین کسی بھی سنجیدہ علمی اور عملی ضرورت کو پورا نہیں کرتے۔3
▪ گنتی کے تین لکھنے والے ( اب آپکو بھی شامل کر لیا جاۓ تو ، چار ) اگر صرف وہی مضمون لکھیں جو کہ مکمل ہو تو صاحب اس لاوارث اردو ویکیپیڈیا کا ڈھانچہ شائد ہماری زندگی میں تو بن نہ سکے گا۔ اس لیۓ ہماری کوشش ہے کہ کسی طرح تمام سائنسی مضامین انگریزی ویکیپیڈیا کے ڈھانچہ کے مطابق اردو میں بھی آجائیں اور پھر جب کوئی اللہ کا بندہ کچھ لکھنے کی کوشش کرے تو اسکے لیۓ مربوط ڈھانچہ پہلے سے موجود ہو۔ ( سائنسی مضامین کا صرف ڈھانچہ تیار کرنا کوئی آسان کام نہیں )
- ایک گزارش یہ ہے کہ اسلامی تاریخی شخصیات (انبیا، آئمہ، اولیا وغیرہ) پر مضامین کے عنوانات سابقوں (جناب، حضرت وغیرہ) اور لاحقوں (درود، سلام وغیرہ) کے 4 بغیر لکھیں۔
▪ اس پر ہدایات کے لیۓ میں ایک صفحہ لکھنے والا ہوں امید ہے کہ اسطرح عنوانات تجویز کرنے کے مسائل کا حل اس مضمون میں وضاحت سے مل جائے گا۔ تھوڑا انتظار کیجیۓ اور مجھے تھوڑا وقت دیجیۓ
▪ یہاں صرف اتنا عرض ہے کہ آپ صفحہ کا عنوان مکمل آداب و القاب کے ساتھ ہی لکھیۓ کہ یہ ہمارا دینی فریضہ ہے - پھر اسکے بعد آپ شخصیت کے ذاتی نام کا کر سکتے ہیں ) ایسا REDIRECT کردیجیۓ (آپ اس شخصیت کا انگریزی نام بھی اصل مضمون کی جانب REDIRECTصفحہ بنا کر اصل مضمون کی جانب ہی میں مـحـمـد (ص) کے مضمون کیلیۓ کیا گیا ہے براہ کرم اسکو دیکھیۓ اور اس صفحہ کے سائڈ مینیو میں | ادھر کس کا جوڑ ہے | پر جاکر اندازہ لگائے کہ کتنے مختلف ناموں کو حضرت محمد صلی اللہ علیہ و الہ وسلم کیا گیا ہے اب چاہے کوئی انگریزی میں چاہے اردو میں کسی بھی REDIRECT نام کے صفحے کی جانب نام سے مـحـمـد (ص) کرے وہ اصل مضمون پر ہی پہنچ جاۓ گا اور سرچ میں کوئی نقص نہیں آۓ گا۔

حييدر كے اپنى بات كے اصرار پر ڈاكٹر صاحب لكهتے هيں

▪ میں آپکی بات سے اختلاف نہیں کرتا لیکن بعض مقامات ایسے آتے ہیں کہ ہمکو کوئی سادہ لفظ ملتا ہی نہیں ایسی صورت میں ہمارے پاس نسبتا مشکل لفظ استعمال کرنے کے سواء کوئی چارہ نہیں رہ جاتا ۔۔۔۔۔ آپ ذرا درج ذیل تین الفاظ کا کوئی آسان ترجمہ بتا دیں تو میں مضامین میں انکو تبدیل کردیتا ہوں
1 : زوج قائدہBase pair
2 ) سے الگ مفہوم رکھتا ہے)heredity ، وراثت (gene : وراثہ (یادآوری کیجیۓ کہ طب میں یہ لفظ وراثہ یعنی Gene
3 : مکـثـورخامری زنجیری تعاملPolymerase Chain Reaction
- اسلامی مضامین کو جذباتی پن سے عاری رکھیں تاکہ وہ مولوی کی تقریر معلوم ہونے.........2
▪ یہاں بھی میں آپ سے اختلاف نہیں کرتا مگر صرف اتنا عرض ہے کہ اگر ہم صفحہ کا عنوان درست اور احترام سے لکھ دیں تو اس سے مضمون مولوی کی تقرر نہیں بن جاتا ، مثال کے لیۓ یہ صفحہ دیکھیۓ حضرت محمد صلی اللہ علیہ و الہ وسلم وغیرہ Mohamad اور Muhammad ۔ پھر مختلف نام مثلا محمد (ص) ، کردیں۔REDIRECTکو
آپکی بات سے مکمل اتفاق ہے کہ دائرہ المعارف میں مضامین کو جذبات اور عصبیت سے پاک ہونا لازمی ہے ۔ افسوس کی بات ہے کہ ویکیپیڈیا میں اب تک موجود زیادہ تر مذہبی مضامین دائرہ المعارف کے معیار پر پورا نہیں اترتے اور اپنی صحت میں ناقص ہیں ۔ میں چونکہ فی الحال مذہبی مضامین نہیں لکھتا کبھی وقت ملا تو محمد(ص) اور قادیانیت کے مضامین کی طرح انکو بھی درست کرنے کی کوشش کروں گا، آپکے پاس وقت ہو تو آپ بھی ان مضامین کی اصلاح کیجیۓ ۔ وسلام

حيدر نے لكها ـ
حیاتیات میرا مضمون نہیں بہرحال میں نے بنیادی جفت ذیادہ مناسب ہے کیونکہ عربی میں اور چند مقامات پر اردو میں زوج کا ترجمہ Base کا مطلب شوہر یا خاوند ہے لہذا یہ لفظ قاری کو پریشان کر سکتا ہے جبکہ بنیادی یا ذیلی ہونا چاہیے۔
▪ ) سے الگ مفہوم رکھتا ہے)heredity ، وراثت (gene : وراثہ (یادآوری کیجیۓ کہ طب میں یہ لفظ وراثہ یعنی Gene
سے بنا ہے جس کا مطلب ہے/تھا اولاد پیدا کرنا لہذا ہم ایک نیا لفظ Genانگریزی میں یہ لفظ جرمن کے لفظ تخلیق باقاعدہ Gene کر سکتے ہیں۔ لیکن چونکہ انگریزی کا لفظ نہیں اس لیے میں سمجھتا ہوں کہ اس کا ترجمہ نہ کرنا بہتر ہے۔ اپنے کثرت سے استعمال کی وجہ سے یہ لفظ اس قدر عام ہو چکا ہے کی اس کا اردو میں نعم البدل متعارف کروانا ناممکن نہ سہی بہت مشکل ضرور ہے۔ میری گزشتہ گفتگو کا مقصد بھی یہی تھا کہ لازمی نہیں کہ ہر لفظ کا اردو میں ترجمہ کیا جائے۔ ہمیں چاہیے کہ اپنی وسیع ذبان میں کچھ گنجائش پیدا کریں اور دوسری ذبانوں کے عام فہم علمی الفاظ کو خوش آمدید کہیں۔
▪ : مکـثـورخامری زنجیری تعاملPolymerase Chain Reaction
کے معنوں میں آتا ہے جس کیلیے ہمارے پاس پہلے ہی سے ایک لفظ multi علمی ذبانوں میں Polyلفظ کثیر موجود ہے اور کثرت سے زیراستعمال بھی ہے لہذا مکثور کی جگہ کثیر کا استعمال ذیادہ مناسب ہے۔ خامری بھی ایک رائج لفظ ہے جبکہ زنیری تعامل بھی نہ صرف رائج ہے بلکہ عام فہم بھی ہے لہذا میں ان میں کوئی تبدیلی تجویز نہیں کروں گا۔ اس لیے میری رائے میں یہ ترجمہ ذیادہ بہتر ہو گا: کثیرخامری زنجیری تعامل ـ

بدھ، 24 مئی، 2006

اردو انسايكلوپيڈيا

سكندر نے اپنى مەمات كا آغاز يونان كى رياستوں كو فتح كرنے سے كيا تها ـ
جب سكندر نے ايتهنز كو فتح كيا تو سكندر اكيلا هى وه جگه ديكهنے چلا گيا جەاں عظيم فلسفى سقراط بيٹها كرتا تها ـ سكندر اس چوكهنڈى ٹائپ جگه ميں بيٹها تها كه سكندر كا منه چڑها وزير پارمينو بهى اس كو ڈهونڈتا هوا وهاں پەنچ گيا ـ پارمينو كەنے لگا كه جناب آپ هر جگه مجهے ساتهـ لے كر جاتے هيں اج آپ اكيلے چلے ائے كيا غلام سے كوئى غلطى هوئى هے؟
يه سن كر سكندر نے كەا كه پارمينو تمەارى ذهنيت ايكـ طوائف جيسى هے تم هر بات ميں سود و زياں ديكهتے هو تمهيں ميرے يەاں انے ميں كوئى فائده نظر نه آتا اس لئيے ميں تم كو ساتهـ لے كر نه آيا ـ
مگر ميں يەاں بيٹهـ كر ديكهنا چاهتا تها كه دنيا كا عظيم ترين فلسفى جەاں بيٹها كرتا تها وهاں سے دنيا كيسى نظر آتى هے ـ
اس روايت كے تناظر ميں
ائيے اپنے گريبان ميں جهانكـ كر ديكهيں كه هم ميں سے كتنوں كى سوچ سكندر كے بقول پارمينو جيسى هے ؟
جنورى دوهزار ايكـ ميں وكى پيڈيا كا آغاز هوا
آپ ميں سے كتنوں كے دل ميں اس انسائكلوپيڈيا ميں هاتهـ بٹانے كا خيال آيا يا كوشش كي ؟؟
جن دوستوں كے كمپيوٹر ميں اردو لكهنے كى سهولت هے وه ضرور اردو وكى پيڈيا سے واقف هوں گے كيونكه جب بهى آپ كوئى اردو لفظ سرچ انجن ميں مارتے هيں تو اردو وكى پيڈيا كا كوئى نه كوئى صفحه ضرور اس لسٹ ميں هوتا هے ـ
ويکيپيڈيا کو جنوری دوەزار ايكـ ميں شروع کيا گيا تھا اور اردو ميں اس کا آغاز مارچ دوەزار چار ميں ہوا ـ اردو ميں اس كو شروع كرنے والے تهے ـ جناب اعلى حضرت شمس الحئى جن كا تعلق كراچى سے هے ـ ميں خاور اس انسائكلوپيڈيا ميں اپريل دو هزار چار ميں شامل هوا ـ شروع ميں ميں صرف ەجے درست كيا كرتا تها ـ كيونكه اعلى حضرت اردو املا ميں كمزور تهے ـ يا كه مجهے ايسا سمجهنے كا مغالطه هوا ـ
آعلى حضرت صاحب اپنى مصروفيت كى وجه سے وكى پيڈيا سے دور هوتے چلے گئے اور ميں اپنى سمجهـ بوجهـ كے مطابق اس ميں لكهتا اور موڈيفكيشنز كرتا رها ـ
اس دوران كتنے هى لوگوں نے اس وكى پيڈيا كى ركنيت لى مگر لكهنے والے لوگـ كم هى تهے ميرے لئے سب سے بڑا مسئله بنتے تهے وه لوگ جو فضول اور بے مقصد باتيں تحرير كيا كرتے تهے ميں ان لوگوں كى تحارير كو مٹانے كا كام كيا كرتا تها ـ
پهر سيف اللّه صاحب شامل هوئے انەوں نے وكى پيڈيا كو كيٹگرايز كيا اور وكى پيڈيا كى انتظاميه سے رابطه كر كے اپنے لئے منتظم اعلى كا عەده ليا اور اس كے بعد مجهے بهى منتظم اعلى بنايا منتظم اعلى بننے كے بعد ميں اس قابل هوا كه فضول مضامين اجنبى بوليوں كے صفحات اور گالى گلوچ وغيره كو وكى پيڈيا سے حذف كرسكوں ـ
اس كے بعد شامل هوئے جناب افراز القريش صاحب ان صاحب نے بيالوجى كے متعلق مضامين لكهنے شروع كيے بيالوجى ميں ان كے مضامين ـ(آپ پڑه كر ديكهيں آپ متاثر هوئے بغير نه رهيں گے) سيف الله كى تكنيكى مەارت اور هم سب كى خلوص نيت كى بدولت اج هم كەـ سكتے هيں كه اردو انسائكلوپيڈيا ايكـ مخزن علوم هے ـ
اس وقت دو ەزار چهـ ميں مجهے سيف اللّه يا افراز القريش صاحب كو كسى مضمون كو حذف كرنے يا موڈيفائى كر نے پر روكنے ٹوكنے والا كوئى نهيں
مگر ەم سب كى نيت كے خلوص نے كبهى بهى كوئى مسئله بننے نەيں ديا ـ
آئيے آپ بهى همارے ساتهـ شامل هوں ـ
خلوص نيت اور غير جانبداررويئے كےساتهـ آپ كا كسى اور ذبان سے اردو ميں كيا گيا ترجمه اس انسائكلوپيڈيا ميں ايكـ امانت هوگا همارى آنے والى نسلوں كے لئيے ـ
وكىپيڈيا

منگل، 23 مئی، 2006

ايكـ متروكـ روايت

بچبن ميں لوگوں سے سنا كه فلاں ادمى جوانى ميں پچهـ لگوا كر پاء پكا خون نكلوايا كرتا تها ـ
كتنے هى بوڑهے لوگوں كى پنڈليوں پر كٹ لگے كے نشان بهى ديكهے هيں كه جوانى ميں پچهـ لگوا كر خون نكلوايا كرتے تهے ـ
ميں سمجها كرتا تها كه ايسا كر كے يه لوگ اپنى جوانى ميں دوسروں پر اپنى بەادرى كى دهاكـ بٹهانا چاهتے هوں گے ـ مگر بقول ان لوگوں كے ميرے جسم ميں خون ذياده هوتا تها اور اگر ميں پچهـ نەيں لگواتا تو مجهے گرميوں ميں چنكاں(سوئياں چبهناں) پڑتى تهيں ـ
بەت بعد ميں جا كر سمجهـ آئى كه سرد ممالكـ كے لوگوں كے جسم ميں گرم ممالكـ كے لوگوں كى نسبت خون ذياده هوتا هے ـ
اور پنجاب ميں سرديوں ميں سخت سردى اور گرميوں ميں سخت گرمى هوتى هے اس لئے سرديوں ميں جوان ادميوں كے جسم ميں خون كے بڑه جانے كى بات سجهـ ميں اتى هے اور گرميوں ميں اگر يه جب تكـ كه قدرتى طريقے سے كم هو گا اس وقت تكـ چنكاں توں پڑيں گى ـ اس لئے پرانے زمانے ميں لوگ پچهـ لگوا كر خون كى مقدار كو متوازن كر ليا كرتے تهے ـ
نقطے كى بات
اگر هم لوگ اپنے پنجاب كى اس روايت كو اج كے دور ميں لوگوں كو اچهى طرح وضاحت كر ديں اور اس پچهـ لكوانے كو خون كا عطيه دے كر اپنے خون كى مقدار كو متوازن كرنے كا طريقه بتائيں تو ايكـ تو خون كا عطيه دينے كا رواج پڑے گا اور خون كے ذيادتى سے پيدا هونے والے بيماريوں كے روكـ تهام بهى هو گى ـ
ڈاكٹر افتخار راجه كى
اس پوسٹ
سے يه روايت ياد ائى

منگل، 16 مئی، 2006

لطيفه

سياستدانوںسے بهرى ايكـ بس حادثے كا شكار هو كر كسى سكهـ كے كهيتوں ميں الٹ گئى ـ
پوليس جب تحقيقات كے لئے وهاں پەنچى تو بس ميں خون تو بكهرا تها مگر لاش ايكـ بهى نهيں تهى ـ
پوليس نے جب سردار جى سے پوچها كه سياستدانوں كا كيا هوا ؟
سردار جى كەنے لگے كه وه سب مر گئے تهے اس لئےميں نے زمين ميں دفن كر دئيے هيں ـ
پوليس آفيسر كو بڑى حيرانى هوئى ـ كيا سبهى مر گئيے تهے؟؟
سردار جى كەنے لگے كه كچهـ سياستدان كەـ رەے تهے كه هم نەيں مرے مگر تم كو پته هے كه جس طرح يه سياستدان جهوٹ بولتے هيں ـ ـ ـ ـ ـ ـ!ـ

نكلاسركوزى

نيكولاسركوزى صاحب هيں جمەوريه فرانس كے وزيرداخله ـ
نىقولا سركوزى ايكـ انتەائى ذەين بيدار مغز اور زيركـ آدمى هے ـ
تين نسليں پەلے ان كا خاندان پولينڈ سے ەجرت كر كے فرانس آيا تها ـ عظيم فرانس نے غير نسل كے محاجر كے پوتے كى صلاحيتوں كا اعتراف اس كو ايكـ اەم وزارت دے كر كيا هے ـ صرف يەى نهيں پچهتر فيصد امكانات اس بات كے بهى هيں كه اگلا فرانسيسى صدر سركوزى هو ـ
كيلے كے نزديكـ ايكـ رفيوجى كيمپ هوا كرتا تها جس سے نكلنے والے ذياده تر رفيوجيوں كى اگلى منزل برطانيه هوا كرتى تهى ـ كيلے والا يه كيمپ برطانيه كو جانے والى ريل كى پٹرى جو كه مشەور زمانه انگلش ٹنل كےپاس واقع تها ـ رفيوجى لوگ كيا كيا كرتے تهے كه يەاں سے گذرنے والى مال گاڑيوں پر چهلانگ لگا كر سوار هو جايا كرتے تهے ـ اور كچهـ جرأت مند تو پيدل هى اس سرنگ ميں داخل هو جايا كرتے تهے ـ برطانيه اس كيمپ كو بندكروانے كے لئيے فرانس پر سفارتى دباؤ ڈالتا رهتا تها ـ مگر انسانى حقوق كا علمدار فرانس ان ريفيوجيوں پر ايكـ حد سے ذياده پابندياں نه لگا سكنے كى مجبورى كى تكرار كرتا رهتا تها ـ
ان دنوں برطانيه كا وزير داخله ڈيوڈ بلينكٹ تها يه بلينكٹ صاحب وهى هيں جو نابينا هيں ـ
نيكلا سركوزى نے برطانيه كے بلينكٹ صاحب كو ٹيبل ٹاكـ پر اس بات پر مجبور كر ديا تها كه ان رفيوجيوں كو برطانيه لے جاؤ ـ
مجهے مەينه تو ياد نەيں مگر يه سن دوەزاردو كى بات هے كه برطانيه نے تاريخ ميں پەلى دفعه رفيوجى لوگوں كو اپنے ملكـ برطانيه ميں خود اپنى بسوں پر لے كر گئے تهے ـ
اس ايكـ مثال سے سركوزى كى ذهانت كااندازه لگا ليں ـ
يه وهى سركوزى هے جس نےمذهبى وابسطگى والے پيراهن پر پابندى لگائى تهى اور جو اب بهى قائم هےـ
مجهے ياد هے ميں ٹىوى پر ديكهـ رها تها كه سركوزى صاحب مسلمانوں كے ايكـ اجتماع ميں انوائٹ تهے جب انەوں نے پەلى دفعه اعلان كيا تها كه حجاب والى فوٹو ائىڈى كارڈ پر نهيں لگائى جاسكے گى ـ تو مسلمان شور مچانے لگے تهے ـ مگر سركوزى نےهاتهـ كو منفى انداز ميں هلاتے هوئے كەا تها ـ اگر نيشنيلٹى كے فوائد لينے هيں تو نيشنل لاء كو بهى قبول كرنا هو گا ـ
اور مسلمان ايكـ دوسرے كا منه ديكهـ رهے تهے ـ
جب سے يه سركوزى صاحب حكومت ميں آئے هيں مملكت فرانس كے لئے آپنى دانست ميں مثبت تبديلياں متعارف كروا رهے هيں ـ
جن ميں ايكـ بەت اەم تبديلى هے قيام كى اجازت كے بغير فرانس ميں رەنے والے غيرملكيوں كے خلاف مەم ـ
فيكٹريوں اور لميٹڈ فرموں ميں تو پەلے ەى بغير كاغذوں والے ادمى كا كام كرنا ناممكن هو چكا هے ـ
اس لئے غير ملكى عموما نچلے درجے كے كام كرتے هوئے ملتے هيں ـ يعنى صفائى وغيره بوجهـ اٹهانے كاكام راج مسترى كے ساتهـ راج مسترى كے مدد گار كے طور پر كام ريسٹورينٹ ميں برتن دهونے كام ـ اس لئے سركوزى صاحب ان دنوں عمارتى كاموں پر ڈهابوں ميں اور جەاں ممكن هے پوليس سے چهاپے پڑوا رەے هيں ـ
اب سياسى پارٹياں بهى ووٹ كے لالچ يا مجبورى كے بغير تو كسى گروه كے كام انے سے رەيں اور يه بے وطن لوگ ووٹ كا دينے كا حق بهى نەيں ركهتے ـ
انسانى حقوق كے علمدار فرانس ميں بغير كاغذوں كے لوگوں كو بهى پوليس چهاپے ميں پكڑنےكے كے باوجود كچهـ دنوں ميں چهوڑ ديتى هے ـ مگر سختى كرتى هے ان بے وطن لوگوں كو كام دينے والے لوگوں پر ـ
بات ميں يه كرنا چاهتا تها ـ
كه
ميں ەفتے كے روز مئى كى تيره تاريخ كو گيلرى لافائيات كے پاس سے گذر رها تها كه ميں جلوس ديكها جو كه تقريبا هوگا دو كلوميٹر لمبا اور يه جلوس تها سركوزى كے خلاف ـ
سركوزى جو كه وزير داخله هے اور اس حثيت ميں پوليس كا سربراه هے اور هر جلوس كى حفاظت كى ذمه دارى هوتى هے پوليس كى اوريه جلوس تها پوليس والے كے خلاف ـ
يه تو سيدها سادا پهڈا بنانے والى بات تهى مگريه مقبوضه پاكستان نەيں يه جمەوريه فرانس هے ـ
يەاں قوانين لوگوں كے فائدے كے لئے هوتے هيں ـ اور
لوگوں پر پابندياں بهى لوگوں كے فائدے كے لئے هوتى هيں ـ جلوس كے متظمين نے حكومت سے مطالبه كيا تها كه همارے جلوس كے دوران پوليس نظر نهيں آنى چاهيے!ـ
اور حكومت نے يه مطالبه مان بهى ليا ـ اسے كەتے هيں عوامى حكومت جو آپنى آنا سے ذياده پبلكـ كے جذبات كا خيال ركهتى هےــ
ميں نے خود آپنى انكهوں سے ديكها كه دو كلوميٹر كے جلوس كے گرد ايكـ بهى پوليس والا نظر نهيں آرها تها ـ
پوليس كى غير موجودگي كے باوجود جلوس ميں كوئى بدمزگى نهيں هوئى ـ
جلوس ميں كئى رنگ اور نسلوں كے لوگ سركوزى كے خلاف نعرے لگا رهے تهے ـ
مثلا
فرانسيسى لوگ ايميگرنٹ كے خلاف نەيں ـ
نكلاسركوزى ريزائن دو ـ
فجيوجيوں كو كاغذ دو ـ
بهولو نهيں تم بهى ايميگرنٹ هوـ

اتوار، 14 مئی، 2006

قيصر كا كيمره

قيصر نے نيا كيمره خريدا هے اور جمعه والے دن وه اپنا كيمره لے كر آيا تها ـ قيصر كے كيمرے سے بنائى كچهـ تصويريں ـ
مجهے اپنى تصويريں بنوانے كا شوق كبهى كا اتر چكا هے مگر ميں نے سوچا كه يادگيرى رهے گى كه دوەزار چهـ ميں كيسے لگتے تهے اور كەاں هوتے تهے ـ
بەت جى چاهتا هے پاكستان منتقل هونے كو قارئين ميرى لئے دعا كريں اللّه سائيں ميرى مشكلات دور كريں ـ
خاورکھوکھر خاور کهوکهر خاور کھوکھرپيرس كى ياديں
خاورکھوکھر خاور کهوکهر خاور کھوکھرلاهور ريسٹورينٹ كى محفليں ـ پيرس ـ
خاورکھوکھر خاور کهوکهر خاور کھوکھرلاهور ريسٹورينٹ كى محفليں ـ پيرس
جاويد بٹ جاويد بٹ فرانس ميں بجلى كے كام كا ٹهيكيدار هے ـ اس كے علاوه كركٹ كا كهلاڑى هے ـ يەاں فرانس ميں پاكستانيوں كى كركٹ ٹيم كا قابل ذكر ركن هے ميں اس ٹيم كے كهلاڑيوں ميں سے جاويد كے علاوه نديم خان كو جانتا هوں ـ جو كه سرحد كا ايكـ گورا چٹا پٹهان هے ـ جاويد بٹ كا تعلق هے گجرات سے ـ فرانس ميں گجرات كے لوگ كامياب هيں ـ اگر كاميابى پيسے هى كانام هے تو ـ

جمعہ، 12 مئی، 2006

مقبوضه پاكستان

ـاسلامي جمهوريه پاكستان پر حمله آور فوج كى ايكـ گن پاكستان (بلوچستان) پر آگ اكلتے هوئے
ہونے والے ایک سکول کی حالتاسلامي جمهوريه پاكستان پر حملے كے دوران فوج كى بمبارى سے بارکھان (بلوچستان)کے گاؤں مٹ کنڈ میں بمباری سے تباہ
ـاسلامي جمهوريه پاكستان پر حملے كے دوران فوج كى بمبارى سے شەيد ايكـ بے گناه (بلوچ) پاكستانى بچه
اسلامي جمهوريه پاكستان پر حمله آور فوج كے جوان خوش باش اگلے حملے(وزيرستان پر) كے لئے كمر كس تيار ـ

كتّا كون هے؟؟

كسى غريب آدمى كے پاؤں ميں كابلى كيكر كا كانٹا چبهـ كرماس كے اندر ٹوٹ گيا ـ اس كانٹے كى تكليف سے اس غريب كو بخار هو گيا ـ اس آدمى كے گهر والے اس كو بخار سپيسلسٹ حكيم كے پاس لے گئے ـ حكيم صاحب نے اس كو بخار كى دوائياں كهلانى شروع كر دييں ـ بخار هے كه اترنے كا نام هى نهيں لے رها ـ
اصل وجه كانٹا جب تكـ نهيں نكلتا يا جب تكـ كنوئيں سے كتا نهيں نكلتا ـ نه بخار اترے گا اور نه كنؤاں پاكـ هو گا ـ
ميرا بات كرنے كا مقصد تها كه همارے حكومتى افلاطونوں ميں اتنى صلاحيت هى نهيں كه ان كے نظر معاملے كے سارے پەلوؤں كا احاطه كر سكے ـ جس طرح بندوق سے اگر گولياں نكال لى جائيں تو صرف ڈانگ ره جاتى هے اسطرح پاكستان كے بڑے افيسرز ميں سے اگر انگريزى نكال لى جائے تو يه ماجهے گامے سے ذياده كچهـ نهيں ـ
حكومتى لوگوں كا باواآدم هى نرالا هے ـ

امام دين گجراتى كا شعر هے ـ

نه چهيڑ ميرى پنڈليوں كو نه چهيڑ
كه ان ميں هے درد جگر مام دينا

اردو كا ايكـ محاوره
بجے گٹهنا پهوٹے آنكهـ

آپ اپنے اردگرد نظر دوڑائيں آپ كو كئى چيزيں ايسى نظر ائيں گى كه اس بيمارى كى دوائى كچهـ اور هے اور علاج كچهـ اور كيا جارها هے ـ
اب مەنگائى كا علاج دوكانداروں كى پكڑ دهكڑ اور ان كو ذخيره اندوز كەـ كر كيا جارها ەے ـ
مگر ان عقل كے اندهوں كو اكنامكـ كے بنيادى اصول طلب اور رسد كا بهى پته نهيں ـ
طلب كے مطابق اگر رسد پورى هو جاتى هے تو ـ ـ ـ ـ
هيرو بننے كے شوهين لوگوں كو سستے علاج كا جهانسا دے كر چندے اكهٹے كر كے هسپتالوں كى صورت ميں آپنى جائيداد بنائے جا رهے هيں ـ
انشورنش كى طرح كا امداد باەمى كا كوئى سسٹم متعارف كروا كے سارى قوم كى سەولت كا خيال كسى كو نهيں آتا ـ
شادى بياه پر پچهلے كچهـ سالوں سےپيدا هونے والى رسوم كا رونا سب رورهے هيں
اور ان كے خلاف مضامين لكهے جارهے هيں اور پوليس ايكشن هو رهے هيں
ائيں اس بيمارى كو پيدا كرنے والاكانٹا كەاں چبها ەے
يا كتّا كەاں سے نكالنا چاهئے ـ
آپ سب مجهے بتائيں ـ
آپ سب كے خيالات پرهنے كے بعدميں بتاؤں گا كه كميار اس كے متعلق كيا سوچتا هےـ
سوال يه هے كه
ان رسوم كى پيدائش كى وجه كيا هے؟
ميرا يه سوال خاص طور پر هے ـ
اجمل صاحب
ميرا پاكستان والے
افضل صاحب
جناب شيخو صاحب
آپنا ڈيره والے منير احمد طاهرصاحب
كيفے حقيقت والے ضياء صاحب
اس كے علاوه اردو دان صاحب كا جامعه اور جامع كے تصيح كے لئيے شكريه ـ

منگل، 9 مئی، 2006

ايكـ پرانى كەانى

ايكـ دفعه كا ذكر هے ـ كهيں مسلمانوں كا ايكـ چهوٹا سا گاؤں تها يه گاؤں اتنا چهوٹا تها كه ان اپنى جامع مسجد بهى نهيں تهى ـ ايكـ دفعه يه هوا كه اس گاؤں كے كنوئيں ميں ايكـ كتا گر كر مر گيا ـ كتے كے گرنے سے يه كنواں جەاں سے سارا گاؤں پانى پيتا تها ـ پليد ەو گيا ـ اس لئيے مسئله پيدا هوا كه پانى كو كيسے پاكـ كيا جائے ـ گاؤں والوں كى ايكـ كميٹى بيٹهى اور اس مسئلے كا تعين كيا گيا كه يه ايكـ مذهبى مسئله هے ـ اس لئيے اس كو اپنى صوابديد سے حل كرنے كى بجائے بڑے گاؤں كى جامعه مسجد كے امام كے فتوے كے مطابق حل كيا جائے ـ
گاؤں واليں كا ايكـ وفد بڑے گاؤں كى مسجد كے امام صاحب كے پاس گيا اور كنوئيں ميں كتّے كے گرنے كا بتا كر كنوئيں كو پاكـ كرنے كا طريقه كار مانگا ـ
امام صاحب نے حكم ديا كه كنوئيں سے سواسو بوكا (ايكـ بالٹى سى جو كنوئيں ميں لٹكائى جاتى هے)پانى نكالا جائے اوراس كے بعد ايكـ لوٹا پانى امام صاحب كے معائنے كے لئيے پيش كيا جائےــ
گاؤں والوں نے ايسا هى كياـ معائنے كے لئے پيش كئے كئے پانى كے لوٹے ميں كتّے كے بال تير رەے تهے اس لئے امام صاحب نے ايكـ دفعه اور پانى كا سواسو بوكا نكال كر بانى كا لوٹا لانے كا حكم كيا ـ
گاؤں والوں نے ايسا هى كيا مگر پاني ميں بال تير رهے تهے ـ
مولوى صاحب نے ايكـ دفعه اور سواسو بوكا ــ ـ ـ ـ ــ
قصه مختصر كتنى هى دفعه اس عمل كى تكرار كے باوجود بال تهے كه تيرے رهے ـ
اس گمگير مسئلے كو ديكنے كے لئيے ايـكـ هجوم اكٹها هو كيا اور اس هجوم ميں سے ايكـ بهولے بهالے ادمى نے مولوى صاحب كو بتايا كه اب تو كتے كى لاش بهى گلنے سڑنے لگى هے اور كنوئيں سے بد بو انے لگى هے ـ
مولوى صاحب نے آپنا سر پيٹ ليا كه بهوليو پنچهيو پەلے كنوئيں سے كتا تو نكالو ـ

حاصل مطالعه
پاكستان كے حكومتى افلاطونز ەر مسئلے ميں بوكے نكالے جارەے هيں مگر كتّا وهيں پڑا رهتا هے ـ

سوموار، 1 مئی، 2006

ايكـ پنجابى نظم

مجهے نەيں پته كه شاعر كا نام كيا ەے ـ اور هوسكتا ەے كەيں كەيں لفظوں كا انداز بهى بدل،گيا ەو ـ بەت مدّت هوئى يه پنجابى نظم سنائى تهى مجهے ايكـ دوست نے جس كا نام تها خاورـ اس خاور كا تعلق تها گجرات كے نزديكى قصبے كنجاه سےـ!ـ
اس پنجابى نظم ميں شاعر بيل كو مخاطب كر كے ەمت اور كوشش كى تلقين كر رها ەے ـ
پنجاب ميں بيل كوپيار سے بلد يا گورا يا بهلّا بهى كەـ كر پكارتے ەيں ـ
اردو پڑهنے والے پچاسى فيصد لوگوں كو اس نظم كى شائد ەى سمجهـ آئے ـ

توں بلدا اكهياں نوٹ لے تے ساء لميرے منگ
ەن دل كڈ جيون جوگيا تے ايويں نه پياء سنگ
توں ركهـ لے ليكهـ پنجالياں گي ايناں دے نال جنگ
تيرے ليكهاں دے نال گوريا دنيا دے لكهيں رنگ

او بلدا نندے جاوندے جيڑے پهلياں دے وچ بەون
جگ وار انەاں دے گاوندا جٍەڑے تارى بهنـ كے پاؤن
كهر كچے هو هو جان پر ذره ساؤڑے پاؤن
توں وچ شريكاں بهليا وگ اچي ركهـ كے تاؤن

اينەاں پسياں دے وچوں منياء تيرے پاء دا سكا پوؤ
جٹ پرے پڑولے اپنے تے دانے لے جئے ٹوؤ
اى گل دوراڈى جاوندى اے گل نه اڑيا چهو
اس گلے خلق خدا دى نت گبهـ كسنى هو

كس ديوؤن وچ وڑيوؤں گوريا توں اوكها لگنا پار
ايتهے لكهاں اڑياں كر كے تے اوڑكـ بيٹهے ەار
ايتهے نتهاں كهوپے چڈياں تے كلّے كرن بيزار
توں وگ رضاء جيويں خصم دى تے دم نه اكّا مار

اے گل جے نئيں تينوں پاؤنودى تے آپنا آپ وكها
اے پن دے ليكهـ پنجالياں تے نتهـ لے ٹڑواء
جٹ فير نئيں نيڑے آوناں جے لينى سو چهڑ كها
اس دنيا دے وچ گوريا ڈاڈے دے نال خدا

آرٹ هى آرٹ

بيكار مباش كچهـ كيا كر
نئے نەيں تو پرانے ادهيڑ كر سيا كر
خاور کا آرٹ فن آرٹ ارٹ ہي آرٹايم اينڈ ايم
خاور کا آرٹ فن آرٹ ارٹ ہي آرٹويسے اچها دكهتا هے ناں؟